رحیم یار خان‘ مخصوص نشستوں پر لیگی امیدواروں کی ناکامی ڈی سی او کو لے ڈوبی

رحیم یار خان‘ مخصوص نشستوں پر لیگی امیدواروں کی ناکامی ڈی سی او کو لے ڈوبی

لیاقت پور (نامہ نگار)ضلع کونسل رحیم یارخاں کی مخصوص بلدیاتی نشستوں پر ن لیگی امیدواروں کی ناکامی ڈی سی او کی تبدیلی کی وجہ بن گئی ،قبل ازیں ایک ڈی پی او بھی مثبت نتائج نہ (بقیہ نمبر26صفحہ12پر )

دینے پر حکومت کی جمہوریت نوازی کا نشانہ بن چکے ہیں تفصیل کے مطابق پورے پنجاب میں رحیم یارخاں واحد ضلع تھا جہاں ضلع کونسل کی چےئرمین شپ کے لیے گزشتہ سال سے ہونے والے بلدیاتی الیکشن میں ن لیگ کو مطلوبہ اکثریت حاصل نہ ہو سکی تھی اس وقت ضلع میں پروفیشنل ازم پر یقین رکھنے والے ڈی پی او زاہد نواز مروت تعینات تھے جنہوں نے ان انتخابات میں حکومتی ارکان اسمبلی کے تمام تر مبینہ دباؤ کو نظر انداز کر تے ہوئے پولیس کو انتخابی عمل پر اثر انداز نہیں ہونے دیا جسکے نتیجہ میں ضلع کی 139یونین کونسلوں میں پیپلز پارٹی اور ا س کے حمایت یافتہ امیدواروں کی اکثریت کامیاب ہو گئی اسکا خمیازہ مذکورہ ڈی پی او کو تبادلے کی صورت میں بھگتنا پڑا اب ان بلدیاتی الیکشن کے مخصوص نشستوں کے مرحلہ میں بھی نتائج ن لیگی خواہشات کے خلاف نکلے جس پر ن لیگی ارکان اسمبلی شدید برہم بتائے جاتے تھے ان کے مبینہ دباؤ پر ڈی سی او کیپٹن (ر) ظفر اقبال بھی ضلع سے رخصت ہونے پر مجبور ہوگئے ذرائع کے مطابق ضلع کونسل میں حکومتی مرضی کے نتائج حا صل کرنے کے لیے قائم مقام ڈی سی او کو چےئرمین و وائس چےئرمین کے الیکشن تک برقرار رکھا جائے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر