خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ آئی ٹی کا بڑا تعلیمی مرکز ہوگا‘ میاں امتیاز

خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ آئی ٹی کا بڑا تعلیمی مرکز ہوگا‘ میاں ...

رحیم یارخان(بیورونیوز)3صوبوں کے سنگم رحیم یارخان میں زیرتعمیر خواجہ غلام فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی کا منصوبہ 2018ء تک پایہ تکمیل کو پہنچانے کا ہدف حاصل کرنے کیلئے پی سی ون کے تحت 3ارب (بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

سے زائد کی خطیر رقم کی لاگت سے یونیورسٹی کے 16بلاکس کی تعمیر کا کام تیزی سے جاری ہے۔220 ایکڑ اراضی پر مشتمل یونیورسٹی کی چار دیواری کی تعمیر کے ساتھ ساتھ پرانی عمارات کی رینویشن کا کام مکمل کیاجاچکا ہے جہاں انجینئرنگ اور آئی ٹی کے چار مختلف شعبوں میں کلاسز جاری ہیں۔یونیورسٹی کا منصوبہ مکمل ہونے کے بعد اگلے 5 سے 10سال میں یونیورسٹی میں طلباء کی تعداد 5ہزار سے تجاوز کرجائے گی جو پنجاب ‘ سندھ اور بلوچستان کے سنگم پر خطہ بھر میں انجینئرنگ اور آئی ٹی کی تعلیم کا سب سے بڑا تعلیمی مرکز ہوگی۔ وفاقی پارلیمانی پورٹس اینڈ شپنگ میاں امتیازاحمد نے یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر محبوب اطہر اور ای ڈی او پلاننگ چوہدری طالب رندھاوا کے ہمراہ یونیورسٹی کے زیرتعمیر بلاکس اور دیگر تعمیراتی حصوں کا دورہ کرکے موقع پر جاری کام کا معائنہ کیا۔ اس موقع پر وائس چانسلر اطہر محبوب نے میاں امتیازاحمد کو تعمیراتی منصوبے پر جاری پیش رفت کے حوالے سے بریفنگ دی اور بتایا کہ یونیورسٹی میں 6 عدد کلاس روم‘ 5عدد کمپیوٹر لیبس مکمل ہوچکی ہیں۔ جبکہ یونیورسٹی کے اندر طلباء وطالبات کیلئے کیفے ٹیریا اور بک شاپ کی سہولت بھی فراہم کی جارہی ہے۔ میاں امتیازاحمد نے یونیورسٹی کے مختلف بلاکس اور شعبوں پر تعمیراتی کام کی رفتار اور معیار پر اطمینان کا اظہار کیا۔

میاں امتیاز

مزید : ملتان صفحہ آخر