دیرینہ دشمنی پرشادی کی تقریب سے واپس جانیوالا نوجوان قتل، ورثاء کا لاش کے ہمراہ احتجاج

دیرینہ دشمنی پرشادی کی تقریب سے واپس جانیوالا نوجوان قتل، ورثاء کا لاش کے ...
دیرینہ دشمنی پرشادی کی تقریب سے واپس جانیوالا نوجوان قتل، ورثاء کا لاش کے ہمراہ احتجاج

  

گوجرانوالہ( نمائندہ پاکستان )دیرینہ دشمنی پر قتل ہونیوالے نوجوان کے ورثاء کا جی ٹی روڈ پر نعش رکھ کر احتجاجی مظاہرہ‘ملزمان کی عدم گرفتاری کیخلاف نعرے بازی اورملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق تھانہ ماڈل ٹاؤن کے علاقہ محلہ فیصل آباد کے رہائشی محمد احمد ولد محمد اکرم کا چند روز قبل علاقہ کے بااثر فیصل گجر، حارث گجر، ہارون گجر وغیرہ کیساتھ معمولی تنازعہ پر جھگڑا ہوا جس پر علاقہ معززین نے بیچ بچاؤ کرواکے دونوں کے درمیان صلح کروادی لیکن ملزمان نے رنجش ختم نہ کی گذشتہ روز محمد احمد شادی کی تقریب سے واپس گھر جارہا تھا کہ گوندلانوالہ روڈ پر مسلح ملزمان فیصل گجر، حارث گجر اور ہارون گجر نے مسلح اسلحہ سے لیس ہوکر نوجوان پر فائرنگ شروع کردی فائرنگ سے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے نوجوان محمد احمد موقع پر ہی ہلاک ہوگیا جبکہ ملزمان ہوائی فائرنگ کرتے ہوئے فرار ہوگئے وقوعہ کی اطلاع ملتے ہی تھانہ ماڈل ٹاؤن پولیس موقع پر پہنچ گئی اور نعش کو قبضہ میں لیکر پوسٹمارٹم کیلئے سول ہسپتال پہنچا دیا۔

پولیس نے ملزمان فیصل گجر، حارث گجر اور ہارون گجر سمیت 5نامزد ملزمان کیخلاف مقتول کے والد اکرم کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا نوجوان کے بیہمانہ قتل اور ملزمان کی عدم گرفتاری کیخلاف مقتول کے ورثاء نے نعش کو سڑک پررکھ کر احتجاجی مظاہرہ کیا اور غلہ منڈی کے سامنے شدیدنعرے بازی کی کئی گھنٹے روڈ بلاک سے گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی جس پر تھانہ ماڈل ٹاؤن پولیس کی بھاری نفری نے موقع پر پہنچ کر مظاہرین کیساتھ کامیاب مذاکرات کرکے انہیں پر امن منتشر کردیا۔ایس ایچ او تھانہ ماڈل ٹاؤن عامر شاہین گوندل نے کہا کہ ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے جلد ہی تمام ملزمان کو گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچائیں گے نوجوان کو قتل کرنیوالے ملزمان کیساتھ کسی قسم کی کوئی رعایت نہیں برتی جائیگی اور مقتول کے لواحقین کو انصاف دیا جائیگا۔

مزید : گوجرانوالہ