350روپے روزانہ کمانے والے ترکھان کے بینک اکاؤنٹ سے اتنی بڑی رقم کی ترسیل کے محکمہ انکم ٹیکس کی دوڑیں لگ گئیں،معاملہ جان کر ہر شخص کی آنکھیں کھلی رہ جائیں

350روپے روزانہ کمانے والے ترکھان کے بینک اکاؤنٹ سے اتنی بڑی رقم کی ترسیل کے ...
350روپے روزانہ کمانے والے ترکھان کے بینک اکاؤنٹ سے اتنی بڑی رقم کی ترسیل کے محکمہ انکم ٹیکس کی دوڑیں لگ گئیں،معاملہ جان کر ہر شخص کی آنکھیں کھلی رہ جائیں

پٹنہ(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت میں ایک کار پینٹر (لکڑی کا کام کرنے والے بڑھئی)جو روزانہ ساڑھے3سو روپے کماتا ہے کے ساتھ کو اس وقت شدید جھٹکا لگا جب محکمہ انکم ٹیکس نے اسے ایک نوٹس بھیجا اور وضاحت مانگی کہ اس کے بینک اکاؤنٹ سے ساڑھے3ارب کی ٹرانزیکشن ہوئی ہے ،انکم ٹیکس کا نوٹس موصول ہونے کے بعد مزدور ترکھان سر پکڑ کر بیٹھ گیا   معاملہ سامنے آنے پر محکمہ انکم ٹیکس کی دوڑیں اور بھارتی سیکیورٹی اداروں میں سنسنی پھیلی ہوئی ہے ۔

مزید پڑھیں:بھارت میں ہم جنس پرستی کے حق میں ریلی ، قانون ختم کرنے کا مطالبہ

ہندوستانی نجی چینل ’’انڈیا ٹی وی ‘‘کے مطابق بہار کے رہائشی ترکھان سدھیر کمار جو مزدوری کر کے 350روپے روزانہ کے حساب سے کماتا ہے کو اسسٹنٹ کمشنر آف انکم ٹیکس سرکل ۔2 او پی جھا نے انکم ٹیکس محکمہ ایکٹ 1961ء سیکشن 147/48 کے تحت کارروائی کے لئے نوٹس بھیجا،محکمہ کے مطابق سال 2014۔15 میں سدھیر ساہ کے اکاؤنٹ سے 3 ارب 33 کروڑ دو لاکھ چودہ ہزار 323 روپے کا لین دین کیا گیا ،محکمے کا کہنا تھا کہ یہ ٹرازیکشن مشتبہ ہے جس کی چھان بین کی جارہی ہے اور ہر کوئی حیران و پریشان ہے کہ ایک مزدور نے اتنی بڑی رقم کی ترسیل اور کاروبار کیسے کیا ؟۔سدھیر کمار انکم ٹیکس کی جانب سے نوٹس دیکھ کر اپنے ہوش ہی کھو بیٹھا اور انکم ٹیکس آفس پہنچ گیا ،پوچھ گچھ پر معاملہ اس وقت مزید مشکوک ہو گیا جب سدھیر کمار کا کہنا تھا کہ بھارتی ریاست گجرات کے شخص نے جام نگر کی ایک کمپنی میں ملازمت دلانے کے نام پراے ٹی ایم کارڈ بنانے کی درخواست پر سائن کرائے لیکن اسے اے ٹی ایم کارڈ تو نہیں ملا لیکن بینک کی جانب سے اے ٹی ایم جاری ہونے کا لیٹر ملا تھا ۔

سدھیر کمار  کا کہنا تھا کہ اس کا الہ آباد میں واقع بینک میں صرف ایک ہی اکاؤنٹ ہے ۔دوسری طرف انکم ٹیکس کے اسسٹنٹ کمشنر او پی جھا نے’انڈیا ٹی وی ‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم پورے معاملے کی تحقیقات کر رہے ہیں لیکن ایسا لگتا ہے کہ بینک کارڈ کا غلط استعمال کیا گیا ہے ،جبکہ ایسا بھی ممکن ہے کہ سدھیر کمار کا فرضی اکاونٹ کھول کر اس کے جعلی دستخط اور بینک عملے کی ملی بھگت سے کموڈٹی ٹرانزیکشن کیا گیا ہو۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...