سانحہ راولپنڈی کی تحقیقات کیلئے اعلیٰ سطحی عدالتی کمیشن تشکیل دیا جائے‘ میاں مقصود

سانحہ راولپنڈی کی تحقیقات کیلئے اعلیٰ سطحی عدالتی کمیشن تشکیل دیا جائے‘ ...

لاہور(آئی این پی)امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے کہا ہے کہ حکمرانوں کے عاقبت نا اندیش فیصلوں کی بدولت ملکی حالات بدستور خراب ہیں،پر امن دھرنا مظاہرین پر وحشیانہ تشد د کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے،ابتک آپریشن کے نتیجے میں 7افراد جان بحق اور 415سے زائد زخمی ہو چکے ہیں جن میں 57پولیس 44 ایف سی کے ہلکار بھی شامل ہیں، سینکڑوں لوگوں کو گرفتار کیا جا چکاہے سانحہ راولپنڈی میں 7افراد کی شہادت کے افسوسناک واقعہ پر حکومت اعلیٰ سطحی عدالتی کمیشن تشکیل دے ۔اس واقعہ میں ملوث حکومتی ذمہ داران کے خلا ف سخت کارروائی کی جائے۔انہوں نے کہا کہ حکومت چاہتی تو اس سارے معاملہ کو احسن طریقے سے حل کیا جا سکتا تھا مگر یوں محسوس ہوتا ہے کہ جیسے حکمرانوں میں سیاسی بصیرت کی کمی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز منصورہ میں مختلف عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ راولپنڈی میں ایک چوک کو خالی کرواتے کرواتے پورے ملک میں مظاہروں کو پھیلا دیا گیا ہے ۔عوام میں اس حوالے سے حکمرانوں کے خلاف شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے ۔سٹرکیں بند ہونے سے عوام الناس کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔حکومت کی جانب سے جس انداز میں اس ساری صورتحال کو ہینڈل کیا گیا ہے اس نے حکمرانوں کی نااہلی کو عیا ں کر دیا ہے ۔ملک میں بحرانی کیفیت ہے ۔سوشل میڈیا اور الیکڑونک چینلز بند کرنے سے ملک میں افواہوں کا بازار گرم ہے جس نے ہر شخص کو پریشان کر کے رکھ دیا ہے ۔انہو ں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے غیر آئینی اقدام اور چینلزکی بندش پر شدید عوامی ردعمل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔ملکی صورتحال غیر یقینی کا شکار ہے۔پر امن مظاہرین پر طاقت کا استعمال کر کے حکمرانوں نے غلطی کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ختم نبوت ﷺ ہمارے ایمان کا حصہ ہے ۔اس کے خلاف سازشیں کرنے والوں کو اہم عہدوں سے فلی الفور فارغ کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ عملا ملک میں حکومت کی رٹ ختم ہو چکی ہے ۔ضرورت اس امر کی ہے کہ حالات کو جلد از جلد قابومیں لانے کے لئے ٹھوس اقدامات کئے جائیں۔اور اس کا بہترین طریقہ یہی ہو سکتا ہے کہ مظاہرین کے ساتھ افہام و تفہیم کا راستہ اختیار کیا جائے

مزید : میٹروپولیٹن 1