شہریوں کوسردیوں میں تو کم ازکم تین مرتبہ مچھلی کھاناچاہیے،ڈاکٹر خالد

شہریوں کوسردیوں میں تو کم ازکم تین مرتبہ مچھلی کھاناچاہیے،ڈاکٹر خالد

لاہور(کلچرل رپورٹر)مچھلی اللہ کی نعمتوں میں خاص اہمیت کی حامل ہے جو ہم سب کے لئے بہت فائدہ مند ہے ان خیالات کا اظہا ر ڈاکٹرخالد نے روز نامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مچھلی میں بہت طاقت ہوتی ہے اور ہر انسان کو سردیوں میں تو کم ازکم تین مرتبہ کھانی چاہیے جس سے اس کی صحت کو بہت فائدہ ہوتا ہے لیکن اس کے لئے دریا کی خالص اور تازہ مچھلی کا ہونا ضروری ہے اسی وقت ہی فائدہ مند ہے دکاندار جو مچھلی فروخت کررہے ہیں اس کا تو پتہ نہیں ہوتا کئی دن پرانی بھی بیچ دیتے ہیں جس سے الٹا نقصان ہونے کا اندیشہ ہے اس سے ہیپاٹائٹس سی اور دیگر بیماریاں بھی پیدا ہوسکتی ہیں اس حوالے سے حکومت کو اس بات کو یقینی بنانیکی ضرورت ہے کہ دکانوں پر فروخت ہونے والی مچھلی کامعیار ضرور چیک کیا جائے ڈاکٹر خالد نے کہا کہ مچھلی میں پائی جانیوالی کیلشیم نہ صرف ہڈیوں کو مضبوط کرتی ہے بلکہ اس کے ساتھ ساتھ انسان کے ہر اعضاء کے لئے بھی سودمند ہوتی ہے اورہر عمر کے لوگوں کے لئے فائدہ مند ہے لیکن زیادہ مصالحہ دار مچھلی سے اجتناب کرنا چاہئیے اور ہمشہ گھر میں مچھلی بنانے کو ہی ترجیحی دینی چاہئیے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1