بھارت نہتے کشمیریوں پر مظالم کو جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال کر رہا ہے: علی گیلانی

بھارت نہتے کشمیریوں پر مظالم کو جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال کر رہا ہے: علی ...

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے بھارتیہ جنتا پارٹی کی فرقہ پرست بھارتی حکومت اور مقبوضہ علاقے میں اسکی کٹھ پتلی انتظامیہ کی طرف سے انسانی حقوق کی بدترین پامالیوں کو حریت رہنماؤں ، کارکنوں اور عام کشمیریوں کے خلاف ایک جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال کرنے پر سخت تشویش کا اظہار کیا ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں بھارتی ظالمانہ کارروائیوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارت مسئلہ کشمیر کی حساسیت اور نزاکت کو نظرانداز کر کے مقبوضہ علاقے میں بپا حالات کو محض امن و اماں کا مسئلہ قر ار دیگر ایک سنگین غلطی کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پتھراؤ کی پاداش میں گرفتار نوجوانوں کیلئے عام معافی کا نام نہاد اعلان محض ایک دکھاوا ہے ۔ سیدعلی گیلانی نے کہا کہ 2008سے لیکر 2016کی احتجاجی تحریکوں کے دوران ہزاروں نوجوانوں کو جعلی مقدمات میں دھر لیا گیا جن کی رہائی کے عوض بھارتی پولیس خطیر رقوم بٹورتی رہی اور اس طرح سے نوجوانوں کی گرفتاری کو آمدنی کا ایک ذریعہ بنایا گیا۔انہوں نے کہا کہ اس وقت بھی حریت رہنماؤں اور کارکنوں سمیت ہزاروں کی تعداد میں کشمیری تھانوں ، جیلوں اور تفتیشی مراز میں بند ہیں جنہیں عدالتی احکامات کے باوجود رہا نہیں کیا جا رہا اور ان پر بار بار کالا قانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کیا جاتا ہے۔

مزید : عالمی منظر