حافظ سعید کو گرفتار کیا جائے ، ورنہ دوطرفہ تعلقات ہونگے : امریکہ

حافظ سعید کو گرفتار کیا جائے ، ورنہ دوطرفہ تعلقات ہونگے : امریکہ

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک )وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ سعید کو قانون کے مطابق گرفتار نہ کیا گیا تو دو طرفہ تعلقا ت متاثر ہوں گے۔وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پاکستان سے تعمیری تعلقات چاہتے ہیں لیکن یہ توقع بھی رکھتے ہیں پاکستان خطے کیلئے خطرہ بننے والوں کیخلاف کارروائی کرے گا۔جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ سعید کی رہائی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے وائٹ ہاؤس کی جانب سے کہا گیا ہے اگر حافظ سعید کو قانون کے مطابق گرفتار نہ کیا گیا تو دو طرفہ تعلقات متاثر ہونگے۔خیال رہے تین روز قبل لاہور ہائیکورٹ کے حکم پر حافظ سعید کی نظر بندی ختم کرنے کے معاملے پر امریکی وزارت خارجہ نے بھی شدید تحفظات کا اظہار کیا تھا۔

امریکہ

واشنگٹن ( آن لائن ) ووڈرو ولسن سینٹر میں جنوبی ایشیا سے متعلق شعبے کے سینئر اہلکار، مائیکل کوگل مین اورافغانستان اور پاکستان کیلئے امریکا کی سابق خصوصی ایلچی لورل ملر نے کہاہے پاکستان سے توقعات پوری نہ ہوئیں تو امریکا خود کارروائیاں کرے گا،امریکی ٹی وی سے بات چیت میں کوگل مین کا کہنا تھا میرے خیال میں آئندہ چند ہفتوں میں یا شاید آئندہ سال کے شروع میں،وقت آئے گا امریکا یہ دیکھے گا پاکستان نے اب تک کیا کیا ہے، کیونکہ امریکا نے معلومات اور اطلاعات شیئر کرنا شروع کیں، اور پاکستان سے مطالبہ کیا کہ وہ حقانی نیٹ ورک کی خصوصی سہولتوں اور لیڈروں کیخلاف وہ کرے جو واقعی امریکہ چاہتا ہے ا ور اگر امریکا اس نتیجے پر پہنچا کہ پاکستان نے وہ سب کچھ واقعی اس طرح سے نہیں کیا جو وہ کہتا رہا ہے، تو اس سے تعلقات میں بڑی رکاوٹ آ سکتی ہے، اور اس کا قدرتی نتیجہ امریکا کی جانب سے مزید سخت پا لیسیا ں اپنانے اور شاید سزا کی صورت میں نکلے، جیسے کہ ڈرون حملوں کو وسعت دینا۔ بنیادی طور پر امریکا معاملات کو اپنے ہاتھوں میں لیتے ہوئے وہ سب خود کرے گا، جس کا وہ پاکستان سے مطالبہ کرتا رہا ہے۔

امریکی وارننگ

مزید : علاقائی