وزارت مذہبی امور نے حج پالیسی ایک ماہ میں تیار کرنیکی ڈیڈ لائن دیدی

وزارت مذہبی امور نے حج پالیسی ایک ماہ میں تیار کرنیکی ڈیڈ لائن دیدی

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)وزارت مذہبی امور نے حج پالیسی2018ء ایک ماہ میں تیار کرنے کی ڈیڈ لائن دے دی ،حج پالیسی 3سے 5سال کیلئے دینے کی تجویز ،سرکاری سکیم 60فیصد اور پرائیویٹ سکیم 40فیصد رکھنے ،سرکاری حج سکیم کی درخواستیں حج پالیسی کے اعلان سے پہلے دسمبر میں لینے کی تجویز،حج فارمولیشن کمیٹی ،ہائی لیول کمیٹی ،حج رجیم کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں سعودی عرب کے ساتھ ایم او یو سائن کرنے سے پہلے سرکاری حج2018ء کیلئے حج درخواستیں ایک لاکھ روپے کے ایڈوانس کے ساتھ وصول کرنے کی تجویز،بقایا رقم قرعہ اندازی میں کامیاب ہونے والوں کو انٹرنیشنل ریڈ ایبل پاسپورٹ کے ساتھ لینے کا فیصلہ ،معلوم ہوا ہے کہ حج2018ء کے لیے پرائیویٹ حج سکیم کے حج آرگنائزر کے موجودہ حج کوٹہ میں ردو بدل کی تجویز سامنے آئی ہے ،حج رجیم کمیٹی کی تجویز پر زیادہ سے زیادہ حج کوٹہ اور کم ازکم کوٹہ کی تعداد کا تعین کرنے کی سفارش بھی زیر غور ہے ،انرول کمپنیوں کی ایک ماہ کے اندر نامزد چارٹرڈ فرم سے آڈٹ کروانے کا بھی فیصلہ ہوا ہے،پرانی حج کمپنیوں کو دوبارہ آڈٹ فرم کے پُل صراط سے گزرنے سے استثنیٰ دینے کے ہوپ کے مطالبے پر بھی غور جاری ہے ،معلوم ہوا ہے کہ حج پالیسی 2018ء دسمبر کے آخر یا جنوری کے شروع میں دینے کی تجویز بھی زیر غور ہے اس کے لیے سعودی حکومت کی طرف سے ایم او یو کی تاریخ آنے کا انتظار ہے ،حج پالیسی2018ء کیلئے ملک بھر سے آنے والی سفارشات کی روشنی میں بیشتر نکات فائنل کر لیے گئے ہیں ،ائیر لائنز سے مشاورت کو بھی حتمی شکل دی جا رہی ہے ،ریڈ ایبل پاسپورٹ اورنادرا کا شناختی کارڈ حج درخواست کے لیے لازمی ہو گا۔

حج پالیسی

مزید : صفحہ آخر