سانگلاہل ، بہنوئی نے سالی قتل کر کے نعش کھیتوں میں پھینک دی

سانگلاہل ، بہنوئی نے سالی قتل کر کے نعش کھیتوں میں پھینک دی

سانگلا ہل(تحصیل رپورٹر) نواحی چک نمبر111 چرونڈ میں بہنوئی صفدر مسیح نے دوساتھیوں کی مدد سے جواں سالہ سالی نسرین اختر کو اغوا کے بعد قبل کر کے نعش کماد کے کھیت میں پھینک دی ، جنگلی جانور نعش کو نوچ کرکھا گئے، کپڑوں اور رومال کی مدد سے لڑکی کے بھائی نے نعش کو شناخت کر لیا،بتایا گیا ہے راولپنڈی کے رہائشی صفدر مسیح کی شادی چک نمبر111 کے بوٹا مسیح کی بہن سے ہوئی، صفدر مسیح نے گھریلو ضرویات پوری کرنے کا بہانہ بنا کر اپنے سسرال والوں سے 50 ہزار روپے ادھار لئے اور ادھار کی رقم چند ماہ بعد واپس کرنے کا وعدہ کر لیا، جب اس کے سسرال والوں نے اپنی ادھار دی ہوئی رقم کی واپسی کا مطالبہ کیا تو صفدر مسیح رقم واپس کرنے کے بجائے ان کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے لگا ، اسکے سسرال والوں سے تعلقات کشیدہ ہو گئے ،پھر28اکتوبر کو اس نے اپنی جواں سالی سالی نسرین اختر کو فون کیا کہ سانگلا ہل آکر اپنی رقم واپس لے جاؤ، جس پر نسرین اختر اپنے بھائی شمعون مسیح کے ساتھ موٹر سائیکل پر سوار ہو کر اپنے بہنوئی کی بتائی ہوئی جگہ چلڈرن پارک پر پہنچی تو اس کے بہنوئی صفدر مسیح نے اپنے دو ساتھیوں کی مدد سے گن پوائنٹ پر نسرین اختر کو زبردستی ایک سفید رنگ کی کار میں ڈال لیا اور اغوا ء کر کے نامعلوم مقام پر لے گئے ، جس کے مقدمہ کے ا ندراج کیلئے مغویہ نسرین اختر کے بھائی بوٹا مسیح نے مقامی تھانہ سٹی کو درخواست دی، جس پر پولیس نے صفدر مسیح اور اس کے دو نامعلوم ساتھیوں کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کر لیا،گذشتہ روز جب نواحی گاؤں پڑوپیاں کا زمیندا ر جب اپنے کماد کی فصل کو کاٹنے کیلئے گیا توکماد میں کسی نامعلوم شخص کی ہڈیاں اور کپڑے پڑے دیکھ کر پولیس کو اطلاع کر دی، جس پر پولیس نے مغویہ نسرین اختر کے بھائی کو بلا یا تو اس نے کپڑوں اور رومال کی مدد سے اپنی بہن کی نعش کو شناخت کر لیا، مقتولہ کی ہڈیاں قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کر دیں۔

مزید : علاقائی