حکومت ایک مرتبہ پھر سیاسی یتیم بننا چاہتی ہے ،غلام مصطفی کھر

حکومت ایک مرتبہ پھر سیاسی یتیم بننا چاہتی ہے ،غلام مصطفی کھر

کوٹ ادو،سنانواں(تحصیل رپورٹر،نمائندہ خصوصی)سابق گورنر وسابق وزیر اعلیٰ پنجاب ورہنماء پی ٹی آئی ملک غلام مصطفیٰ کھر نے کہا ہے کہ حکومت نے ایک بار پھر سانحہ ماڈل ٹاؤن کو دہرایا ہے ایسا کام عوامی حکومت نہیں کرتی بادشاہوں کی حکومت کرتی ہے،بڑے افسوس کی بات ہے کہ ساری(بقیہ نمبر13صفحہ12پر )

حکومت ایک نا اہل شخص کے دربار میں حاضر ہے اور ملک جل رہا ہے،ایک پر امن احتجا ج پر شیلنگ کرانا حکومت کی بوکھلاہٹ کا نتیجہ ہے،انہوں نے کہا کہ کہ ن لیگ کی حکومت ایک دفعہ پھر سیاسی یتیم بننا چاہتی ہے لیکن چیف آف آرمی سٹاف نے ن لیگ کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ہے،انہوں نے کہا کہ ملک کی بقاء اس میں ہے کہ جلد از جلد اسمبلیاں تحلیل کر کے الیکشن کرا دیے جائیں،اگر ن لیگ کی حکومت کو مزید 6ماہ دیے گئے تو یہ ملک کو مزید تباہی پر لے جائے گی،ملک مصطفیٰ کھر نے کہا کہ ہم سب مسلمانوں پر ختم نبوت کی حفاظت کرتا فرض ہے،لیکن ن لیگ کی حکومت خود ملک میں فساد کرانا چاہتی ہے،ن لیگ اور پاکستان پیپلز پارٹی تحریک انصاف عمران خان کی دن بدن بڑھتی ہوئے مقبولیت سے خوف زدہ ہیں،یہ دونوں جماعتیں چاہتی ہیں کہ ملک میں الیکشن نہ ہوں ، ختم نبوت کی ترمیم کرنا نا قابل تلافی جرم ہے اور ایسا کرنے والوں کو پھانسی دی جائے،شریف برادران کی کشتی بھنور میں پھنس چکی ہے،انشاء اللہ ملک کا اگلا وزیر اعظم عمران خان ہی ہوگا، اس موقع پر ان کے ہمراہ سابق صوبائی وزیر ملک عبدالرحمٰن کھر،پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء ملک محبوب غازی کھر،ڈاکٹر عمر فاروق بلوچ،سرائیکی شاعر منظور سیال،مبین شاہ بخاری،حاجی جاوید خان چانڈیہ،نصیر رحمانی،چوہدری بلال،چوہدری منصور،چوہدری اسلام الدین،چوہدری وارث علی ندیشہ،جیون خان کشک،محمد علی اعوان،شاہد آرائیں ،ملک نعیم ملک منظور ،مولانا حاجی نذیر تھہیم،ملک کاشف کھر،حافظ صہیب حمید ودیگر بھی موجود تھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر