سیوریج لائن بچھانے کے دوران تباہ میٹل روڈ کی بحالی میں ناقص میٹریل کا استعمال شروع

سیوریج لائن بچھانے کے دوران تباہ میٹل روڈ کی بحالی میں ناقص میٹریل کا ...

ملتان(نمائندہ خصوصی)واسا ملتان کے کنٹریکٹر نے سیوریج لائن کی بچھائی کے دوران تباہ ہونیوالے میٹل روڈ کی بحالی میں ناقص میٹریل کا استعمال کرنا شروع کردیا۔واسا ملتان نے سورج میانی سے ایم ڈی اے اور باغ لانگے خان تک سیوریج لائن کی بحالی کیلئے کروڑوں روپے کا کنٹریکٹ(بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

کامیاب کمپنی کو جاری کردیا۔اس کنٹریکٹر نے سیوریج لائن کی بچھائی کدوران روڈ پر مٹی کے ڈھیر لگادیئے اس پروجیکٹ کے دوران کسی موقع پر بھی کنسلٹنٹ نے کنٹریکٹر کو مٹی ہٹانے پر مجبورنہیں کیا۔سیوریج بچھائی کے دوران تقریباً 3سے 4کلومیٹر طویل سڑک کواُدھیڑ کر رکھ دیا گیا۔سیوریج لائن بچھانے کے بعد جب سڑک کی بحالی کا موقع آیا تو کنٹریکٹر نے انتہائی نااہلی کا مظاہرہ کرنا شروع۔سڑکی کی بحالی کے دوران کنٹریکٹر نہ تو مقررہ شرائط پر عمل کررہا ہے اور نہ ہی مطلوب اہلیت کے مطابق افرادی قوت استعمال کررہا ہے معلوم ہواہے روڈ کھودائی کے دوران نکالی گئی مٹی کو دوبارہ بھرت کیلئے استعمال کیا جارہا ہے۔اس بھرت کے دوران مناسب انداز میں روڈ رولر استعمال نہیں کیا گیا۔کنٹریکٹر نے نیاپتھر استعمال کرنے کی بجائے ٹوٹ ہوئی سڑک کا پتھر دوبارہ استعمال کردیا۔جبکہ انتہائی ناقص کول تار استعمال کی جارہی ہے۔معلوم ہوا ہے اس پروجیکٹ پرکام کرنیوالا کنسلٹنٹ زیادہ تر وقت سائیٹ سے غائب رہا۔اب روڈ بحالی کے دوران بھی کنسلٹنٹ غائب ہے۔صرف میں بیٹھ کر کنٹریکٹرکی جانب سے تیار کیے گئے بلز کلیئر کرنے میں مصروف ہے۔روڈ کی بحالی ناقص میٹریل کے استعمال کے نتیجے میں یہ سڑک آئندہ چند دنوں تک ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوجائیگی۔جبکہ سڑک بحالی کیلئے خرچ کئے گئے لاکھوں روپے واسا افسران،کنٹریکٹر اور کنسلٹنٹ کی نااہلی کی بھینٹ چڑھ جائیں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر