گھر میں سوئے بچوں پر قیامت گزر گئی، 4جھلس کر جاں بحق

گھر میں سوئے بچوں پر قیامت گزر گئی، 4جھلس کر جاں بحق

ڈہرکی(نامہ نگار)ڈہرکی کے نواحی گاؤں اللہ ڈنو جھیڈو کے گھر میں المناک واقع موم بتی سے آتشزدگی نیند میں سوئے ہوئے چار معصوم بچے جھلس کر جاں بحق انہیں بچانے کی کوشش میں دوخواتین بھی آگ میں جھلس کر شدیدزخمی ہوگئیں گھرمیں پڑی لاکھوں رپوں کی کپاس اور قیمتی سامان راکھ(بقیہ نمبر52صفحہ12پر )

کا ڈھیر ایک گھر سے معصوم بچوں کے چار جنازے اٹھنے پر علاقہ سوگ میں تبدیل ہر آنکھ اشک بارسینکڑوں افراد کی نمازجنازہ میں شرکت ۔ تفصیلات کے مطابق اوباڑوکے نواحی گاؤں جمال پہنورمیں رات دیر گئے موم بتی سے اللہ ڈنو جھیڈو کے گھرکو آگ لگی گئی جس کے نتیجہ میں گھرمیں گہری نیند میں سوئے 4معصوم بچے 4 سالہ سویرا3 سالہ آصفہ 8سالہ ماجداور2سالہ حزب اللہ جھلس کرجاں بحق ہوگئے جبکہ انہیں بچانے کی کوشش کرتے ہوئے انکی ماں سمیت دوخواتین بھی آگ میں جھلس کر شدید زخمی ہوگئیں آگ لگنے سے مکمل گھر جل کرخاکستر ہوگیا اور گھر میں رکھی ہوئی لاکھوں روپوں کی کپاس اور دیگر قیمتی سامان بھی جل کر راکھ کے ڈیرھ میں تبدیل ہوگیاہے انتظامیہ کو آگ لگنے کی بروقت اطلاع دی گئی لیکن نہ فائر برگیڈ کی گاڑی بھجی گئی اور نہ کوئی امداد ٹیم علاقہ مکینوں نے اپنی مد ددآپ کے تحت آگ پرقابوپا کر گاؤں کے مذید گھر وں اورجانی نقصان سے بچا لیا ایک ہی گھر سے چار معصوم بچوں کے جب جنازے اٹھائے گئے تو ہر آنکھ اشک بارہوگئی اور پورا علاقہ سوگ میں تبدیل ہوگیا معصوم بچوں کی نمازجنازہ میں علاقہ سیاسی سماجی اوردیگرمعززین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ابائی گاؤں میں تدفین ورثا سے تعزیت کا سلسلہ جاری ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر