میرٹ،قانون کی بالادستی کیلئے ہرممکن اقدامات اٹھائینگے،جسٹس ایم تبسم آفتاب

میرٹ،قانون کی بالادستی کیلئے ہرممکن اقدامات اٹھائینگے،جسٹس ایم تبسم آفتاب

مظفرآباد(بیورورپورٹ)ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کی جانب سے جسٹس ایم تبسم آفتاب علوی چیف جسٹس عدالت العالیہ آزاد جموں وکشمیر کے اعزاز میں ایک تقریب منعقد کی گئی ۔جس میں چیف جسٹس اور معزز جج عدالت العالیہ جسٹس صداقت حسین راجہ نے شرکت کی ۔تقریب میں جسٹس (ر) سردار محمد اشرف خان ،جسٹس (ر) خواجہ افتخار حسین بٹ،چوہدری محمد اسحاق (ر) ڈسٹرکٹ و سیشن جج ،سردار ظفر اقبال (ر) ڈسٹرکٹ و سیشن جج کے علاوہ ڈسٹرکٹ جوڈیشری کوٹلی اور ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کوٹلی نے سپاس نامہ پیش کیا ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے جسٹس ایم تبسم آفتاب چیف جسٹس عدالت العالیہ نے ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کوٹلی کا تقریب کے انعقاد پر شکریہ ادا کیا ۔چیف جسٹس نے کہا کہ میرٹ اور قانون کی بالادستی کیلئے ہر ممکن اقدامات اٹھائے جائیں گے ۔چیف جسٹس نے وکلاء کو بھی پیشہ وارانہ امور محنت،دل جمعی اور لگن سے سر انجام دینے کی تلقین کی ۔اس موقع پر چیف جسٹس نے مقدمات کی کثیر تعداد کے پیش نظر کیمپ کوٹلی کو سرکٹ بینچ ہائیکورٹ قرار دئیے جانے اور جملہ سرکٹ ہاء کی مالی ضروریات کے پیش نظر ان کیلئے علیحدہ بجٹ مختص کیے جانے کے اقدامات کا اعلان کیا ۔درج رہے کہ جسٹس ایم تبسم آفتاب علوی چیف جسٹس عدالت العالیہ و جسٹس صداقت حسین راجہ نے مورخہ 20-11-2017تا 25-11-2017کیمپ کوٹلی کا دورہ کرتے ہوئے مقدمات کی سماعت کی ۔اس دوران چیف جسٹس نے عدالت سول جج کھوئیرٹہ کی چیکنگ بھی کی ۔چیکنگ کے دوران آفیسران عدالت اور اہلکاران اپنی ڈیوٹی پر بروقت حاضر اور عدالتی امور سر انجام دیتے پائے گئے ۔مطابق ہدایات جوڈیشل ورکنگ پالیسی 2017مقدمات کی فہرست پیشی نمایاں جگہ پر آویزاں پائی گئی ۔عدالتی امور کی بااحسن انجام دہی ،بروقت حاضری اور جملہ امور پر عملدرآمد کی نسبت چیف جسٹس عدالت العالیہ آزاد جموں وکشمیر نے اطمینان کا اظہار کیا اس موقع پر کھوئیرٹہ بار کے وکلاء صاحبان نے چیف جسٹس عدالت العالیہ کو کھوئیرٹہ بار سے خطاب کرنے اور چائے کی دعوت دی جسے کیمپ کوٹلی میں مقدمات کی سماعت کی وجہ سے پذیرائی نہ دی جا سکی ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر