فیض آباد دھرنے کیخلاف آپریشن،کشمیر بھر میں احتجاجی مظاہرے

فیض آباد دھرنے کیخلاف آپریشن،کشمیر بھر میں احتجاجی مظاہرے

مظفرآباد(بیورورپورٹ)فیض آباد دھرنے کو اکھاڑنے کیلئے وفاقی حکومت کے آپریشن اور اور شرکاء پر تشدد کیخلاف آزادکشمیر بھر میں عاشقان مصطفی ؐ سڑکو ں پر نکل آئے ۔احتجاجی مظاہرے ‘ وفاقی حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی گرفتار افراد کو فوری رہا کرنے‘ ختم تبوت ؐ پر ڈاکہ ڈالنے والوں کو بے نقاب کرکے قرارواقعی سزاء دینے ‘کامطالبہ ۔وفاقی حکومت ہوش کے ناخن لے اور ختم نبوت پر ڈاکہ ڈالنے والے کو سامنے لایا جائے۔ گزشتہ روز تحریک تحفظ ناموس رسالت و ختم نبوت آزاکشمیر کے زیراہتمام فیض آباد دھرنے کیخلاف وفاقی حکومت کے آپریشن اور سخت ترین تشد د پر ریاست بھر میں احتجاجی مظاہر ے کئے گئے۔ سینٹرل پریس کلب و دربار سائیں سخی سہیلی سرکارؒ کے سامنے اظہار یکجہتی کیلئے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔لبیک یارسول اللہ ‘ تاجدار ختم نبوت زندہ باد‘غلام ہیں غلام ہیں رسول ؐ کے غلام ہیں کے فلک شگاف نعرے۔ تمام سنی تنظیموں کے علماء اور کارکنا ن نے بھرپور شرکت کی ۔اس موقع پراظہار یکجہتی علامتی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے صدر تحریک علامہ حمید الدین برکتی ‘سیکرٹری جنرل مولانا قاری محمد زمان سیفی ‘ پیر سید نذیرحسین گیلانی ‘سابق وزیرپیر سید غلام مرتضیٰ گیلانی ‘میاں محمد بشیر نقشبندی ‘ عتیق احمد رضا ‘علامہ تنویر سیفی ‘مفتی عمران رضا شیرازی ‘ مولانا عبدالقیوم ‘ صدام عباسی ‘ گل بازخان اور دیگر مقررین نے کہاکہ پرامن دھرنا کے شرکاء پر جس طرح تشد دکیا گیا اس کی مثال نہیں ملتی ۔ حکومت نے چنگاری سلگا دی ہے جو آگ لگی ہے اس میں حکمران بھسم ہو جائینگے ۔ یہ ملک رسول ؐ کے نام پر بنا تھا اس میں رسول ؐ کا نظام قائم ہو کررہے گا۔پاکستان جس کیلئے بنا تھا اب اس طرف جائے گا۔ امیر الجاہدین علامہ خادم حسین رضوی کے تمام مطالبات کو من وعن پورا کیا جائے۔ میلادکے جلوسوں کا رخ بھی اسلام آباد کی طرف موڑا جاسکتا ہے۔ مقررین نے وفاقی حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ پاکستان عالمی شیطانی قوتوں کے آلہ کاروں کو بے نقاب کرکے قرار واقعی سزادی جائے تاکہ اسلام کے نام پر وجود میں آنیوالی اس مملکت ایسے ناسوروں سے پاک ہو سکے ۔علامہ خادم حسین رضوی اس وقت پوری قوم کی آواز ہیں اور پوری قوم اس اہم ترین مسئلے پر ان کے ساتھ اور شانہ بشانہ کھڑی ہے۔دھرنے میں شہادتوں کا جام پینے والے امر ہوگئے ہیں۔ کارکنان خود کو تیار رکھیں بڑی کال کا انتظارکریں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر