ورلڈ ہاکی الیون کا دورہ ، پشاور نظر انداز،عاقل شاہ کا احتجاج کا اعلان

ورلڈ ہاکی الیون کا دورہ ، پشاور نظر انداز،عاقل شاہ کا احتجاج کا اعلان

پشاور(سپورٹس رپورٹر) خیبر پختونخوا اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر سید عاقل شاہ نے ورلڈ ہاکی الیون کے دورہ پاکستان میں پشاور کو نظر انداز کرنے پر احتجاج کا اعلان کیا ہے انہوں نے ڈیڈ لائن دی ہے کہ تین روز کے اندراندر پشاور میں ورلڈ ہاکی الیون کے میچ کے انعقاد کا اعلان نہ کیا گیا تو نہ صرف خیبرپختونخوا بلکہ اسلام آباد میں احتجاج کیا جائے گا۔ گزشتہ روز پشاور میں پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پی ایچ ایف اپنے طور پر فیصلے کررہی ہے ‘کیا پشاور ہمارے ملک کا حصہ نہیں ہے جس کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلو ک کیاجارہا ہے ‘انہوں نے کہا کہ پشاور میں مثالی امن قائم ہے اس کے باوجود پشاور میں انٹرنیشنل میچ نہیں دیاجارہا‘انہوں نے کہا کہ اب ورلڈ ہاکی الیون کے اہم ترین دورے میں پشاور کو نظر انداز کیا جارہا ہے جس پر صوبہ بھر کے عوام مایوسی کا شکار ہوگئے ہیں‘انہوں نے کہا کہ ہمارے صوبے اور خاص طور پر پشاور سے انٹرنیشنل ہاکی کھلاڑی سامنے آئے جن میں ان کے والد لالہ ایوب بھی تھے جنہوں نے 1936 میں برلن اولمپکس میں شرکت کی ‘ان کے ساتھ بریگیڈئر حمیدی‘رشیدجونیئر ‘قاضی صلاح الدین ‘مصدق حسین ‘رحیم خان‘ فرحت خان‘فضل الرحمان ‘قاضی محب اور دیگر کھلاڑی شامل ہیں جنہوں نے انٹرنیشنل لیول پر سبز ہلالی پرچم کو بلند کیا اور ملک و قوم کے لئے اعزازات جیتے اور اب پشاور کو نظر انداز کرنے پر ہم سراپا احتجاج ہیں‘انہوں نے کہا کہ ہمارے صوبے میں خیبر پختونخوا ہاکی ایسوسی ایشن نے بہترین کھلاڑی تیار کئے جنہوں نے قومی اور انٹرنیشنل سطح پر ملک وقوم کانام روشن کیا ایسوسی ایشن کے چیئرمین محمد سعید خان‘ صدر کیپٹن (ر) طارق حیات اور سیکرٹری سید ظاہر شاہ کی کاوشیں قابل تحسین ہیں اور ہم ان کے ساتھ کھڑے ہیں صوبے کے کھلاڑیوں کے حقوق کے حصول کے لئے جنگ جاری رہے گی اس کے ساتھ ساتھ یہاں کے عوام کے لئے انٹرنیشنل ہاکی مقابلے پشاور میں لائیں گے جس کے لئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر