جامعہ پشاور: فیسوں میں اضافے کے خلاف احتجاجی دھرنے کی تیاریاں

جامعہ پشاور: فیسوں میں اضافے کے خلاف احتجاجی دھرنے کی تیاریاں

چارسدہ (بیورو رپورٹ) جامعہ پشاور میں فیسوں میں اضافے کے خلاف احتجاجی دھرنے کی تیاریاں عروج پر ۔ متحدہ طلبہ محاذ کے پلیٹ فارم سے طلباء فیڈریشنز اور سوسائٹیز کل وائس چانسلر کے دفتر کے سامنے احتجاجی مظاہرہ اور دھرنا دیگی ۔ مطالبات کے منظوری تک احتجاجی دھرنا جاری رہیگا۔ اول شیر خان ۔ تفصیلات کے مطابق جامعہ پشاور متحدہ طلباء محاذ کے جنرل سیکرٹری اول شیر نے میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے کہا جامعہ پشاور میں فیسوں میں ناروا اضافے کے خلاف متحدہ طلبہ محاذ کل بروز منگل وائس چانسلر کے دفتر کے سامنے پر امن احتجاجی مظاہرہ اور دھرنا دیگی جو مطالبات کے منظوری تک جاری رہیگا۔ انہوں نے کہا کہ احتجاجی مظاہرے کے حوالے سے تمام تر تیاریاں آخری مراحل میں ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ جامعہ پشاور کی انتظامیہ ہر ناکامی کا ملبہ طلبہ پر ڈال رہی ہے ۔ ہر سال فیسوں میں 10فی صد اضافہ کرکے غریب طلبہ کو تعلیم سے محروم کیا جا رہا ہے ۔ ہاسٹلوں میں ہر سال تعمیراتی کا موں کے مد میں کروڑوں روپے خرچ ہو رہے ہیں لیکن ہاسٹلوں کی حالت زار روز بہ روز خراب ہو تی جا رہی ہے ۔ طلبہ سے ڈگری اور ویر ی فیکیشن کی مد میں ہزاروں روپے بٹورے جا رہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ مختلف شعبہ جات میں ڈراپ آوٹ کے نام پر طلبہ کا کیرئیر داؤ پر لگا جا جا رہا ہے ۔ انسٹیٹیوٹ آف ایجوکیشن اینڈ ریسرچ کے طلبہ نے ڈگریاں حاصل کر لی ہے لیکن ایچ ای سی ان کی ڈگریاں رجسٹرڈ ہی نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب تک جامعہ پشاور کی انتظامیہ ہمارے مطالبات منظور نہیں کرتی اس وقت تک دھرنا جا ری رہیگا۔ اس موقع پر متحدہ طلبہ محاذ کے دیگر قائدین بلال بونیری اورعاطف داوڑ بھی موجود تھے

 

مزید : پشاورصفحہ آخر