ختم نبوت بل میں چھیڑ چھاڑ خود نواز شریف نے کروائی ہے ، سندھ ڈیمو کریٹک الائٹس

ختم نبوت بل میں چھیڑ چھاڑ خود نواز شریف نے کروائی ہے ، سندھ ڈیمو کریٹک الائٹس

سکھر (بیورو رپورٹ ) سندھ ڈیموکریٹک الائنس کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ ختم نبوت بل میں چھیڑ چھاڑ خود نواز شریف نے کروائی ہے، اسلام آباد واقعے کے ذمہ داروں کو عبرتناک سزا ملنی چاہیے، آصف علی زرداری، الطاف حسین، رحمان ملک اور عاصم حسین ایک ہیں او ر ان کی پشت پر را ہے۔سی پیک کا تحفظ سندھ کے لوگ کریں گے، سندھ کے ساتھ بہت زیادتیاں ہوئی ہیں، جب تک ہمارے سینے میں سانس ہے، تب تک سندھ دھرتی کو تقسیم نہیں ہونے دیں گے، عدلیہ اور فوج سے ٹکراؤ ملک سے ٹکراؤ کے مترادف ہے، پیپلز پارٹی سندھ دشمنوں کی پارٹی بن چکی ہے، بھٹو کا سندھ کے لوگوں نے بہت ساتھ دیا، زرداری مافیا بھٹو اور بینظیر کے نام پر عوام کو لوٹ رہی ہے، دس سال میں سندھ کو بدحال بنادیا، عوام اب بیدار ہوچکے ہیں، الیکشن میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے،میاں نواز شریف جب اقتدار میں آتے ہیں تو ان کی گردن میں سریا ہوتا ہے، سندھ کا جو حشر ہوا ہے، اس میں نواز شریف بھی شریک ہیں، عوام گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کاساتھ دیں تو سندھ کو بہتر صوبہ بنا کر دکھائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سکھر میں روہڑی بائی پاس پر مسلم لیگ (فنکشنل) کی میزبانی میں منعقدہ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جلسے سے مسلم لیگ فنکشنل کے سربراہ اور حروں کے روحانی پیشوا پیر صاحب پگارا، پیر صدر الدین شاہ راشدی، سابق وزیراعلیٰ سندھ سید غوث علی شاہ، سابق وزیراعلیٰ ارباب غلام رحیم، سابق وزیر داخلہ سندھ ذوالفقار مرزا، قومی عوامی تحریک کے سر براہ ایاز لطیف پلیجو، نیشنل پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما غلام مرتضیٰ جتوئی، رکن سندھ اسمبلی شہریار خان مہر ودیگر نے بھی خطاب کیا۔ جلسے میں گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس میں شامل جماعتوں کے ہزاروں کارکنان نے شرکت کی۔ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر اعلی سندھ سید غوث علی شاہ نے کہا کہ بیروزگاری سندھ کا سب سے بڑا مسئلہ ہے ۔سندھ مضبوط ہے تو پاکستان مضبوط ہوگا۔ پیرپگاڑا کے خاندان نے ملک وقوم کے لیے قربانیاں دی ہیں۔عدلیہ اور فوج سے ٹکراؤ ملک سے ٹکرا کے مترادف ہے۔سابق وزیر اعلی سندھ ارباب رحیم نے جلسہ سے خطاب کے دوران مسلم لیگ ن سے علیحدگی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ میاں صاحب اقتدار میں آتے ہیں تو ان کے گردن میں سریا ہوتا ہے۔میاں صاحب سندھ کا جو حشر ہے اس میں آپ بھی شریک ہیں۔ختم نبوت بل خود نواز شریف نے کرایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم میں تمام جعلی بھرتیاں پیپلزپارٹی کے دور میں ہوئی ہیں جس کا اعتراف ان کے وزیر نے بھی کیا ہے۔ اب یہ لوگ ترقیاتی کاموں میں کرپشن کررہے ہیں ،سندھ میں اب ہمارا مقابلہ چوروں سے ہے۔سابق وزیر داخلہ ذوالفقار مرزا نے کہا ہے کہ سندھ کے ساتھ بہت زیادتیاں ہوئی ہیں۔ جب تک ہمارے سینے میں سانس ہے، تب تک سندھ دھرتی کو تقسیم نہیں ہونے دیں گے۔ہم عہد کرتے ہیں کہ سندھ کے کسی شخص کے ساتھ زیادتی ہوئی تو اس کابھرپور جواب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ روٹی کپڑا اور مکان کے نعرے میں اب پانی بھی شامل ہوگیا ہے۔ جلسے سے خطاب کے دوران عرفان اللہ مروت نے کہا کہ پیپلزپارٹی کو شرم ہو تو وہ یہ جلسہ دیکھ کر مستعفی ہوجائیں۔ اسلام آباد واقعے کے ذمہ داروں کو عبرتناک سزا ملنی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کے ساتھ ظلم ہورہا ہے، سندھ کی سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کاشکار اور تعلیم وصحت کا بیڑاغرق ہے۔ قومی عوامی تحریک سربراہ ایاز لطیف پلیجو نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی سندھ دشمنوں کی پارٹی بن چکی ہے، بھٹو کا سندھ کے لوگوں نے ساتھ دیا۔ زرداری مافیا بھٹو اور بینظیر کے نام پر عوام کو لوٹ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیوز چینلز کی نشریات بند کرنے کی مذمت کرتے ہیں ۔نیب بتائے کہ اب تک کسی وزیر یا مشیر کوسزا کیوں نہیں ملی ہے۔انہوں نے کہا کہ سندھ کسی کو توڑنے نہیں دیں گے۔ آصف علی زرداری، الطاف حسین، رحمان ملک اور عاصم حسین ایک ہیں او ر ان کی پشت پر را ہے۔سی پیک کا تحفظ سندھ کے لوگ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں فصلوں کے نرخ مقرر کیے جائیں,اقتدار میں آکر سندھ کوتعلیم سڑکیں اورپل دیں گے،جی ڈی اے کو الیکشن کمیشن میں رجسٹرڈ کرائیں گے،سندھ میں اب زرداری کا دور نہیں آئے گا۔وفاقی وزیر اور ننیشنل پیپلز کے مرکزی رہنما غلام مرتضی جتوئی نے کہا کہ سندھکے عوام بیدار ہوچکے ہیں۔ اب الیکشن میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے۔دس سال میں سندھ کو بدحال بنا دیا گیا ہے۔ حکمرانوں کی لوٹمار کی وجہ سے سندھ میں غربت بڑھتی جارہی ہے۔مسلم لیگ فنکشنل کے رکن سندھ اسمبلی شہریار خان مہر نے کہا کہ عوام کو کرپٹ حکمرانوں سے نجات دلائیں گے۔ سندھ کے بجٹ میں تعلیم وصحت کے لیے مختص کروڑوں روپے خرچ نہیں کیے جاتے۔پیپلزپارٹی بھٹو کا نام اب صرف ووٹ لینے کے لیے استعمال کررہی ہے۔عوام گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کاساتھ دیں تو سندھ کو بہتر صوبہ بنا کر دکھائیں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر