حیدرآباد، متحدہ کے سربمہر دفاتر کھولنے کی کوشش پولیس نے ناکام بنا دی

حیدرآباد، متحدہ کے سربمہر دفاتر کھولنے کی کوشش پولیس نے ناکام بنا دی

حیدرآباد(بیورو رپورٹ )ایم کیو ایم پاکستان کی طرف سے حیدرآباد سربمہر دفاتر کھولنے کی کوشش پولیس نے ناکام بنا دی، ڈاکٹر فاروق ستار نے جس جگہ پریس کانفرنس کرنی تھی اسے میئر کیمپ آفس کا نام دے کر کھولنے کی کوشش کی گئی مگر پولیس نے اسے بھی بند کرا دیا۔الطاف حسین کی طرف سے 22 اگست کو پاکستان دشمنی پر مبنی مواصلاتی تقریر کے بعد حیدرآباد میں بھی ایم کیو ایم کے دفاتر سیل کر دیئے گئے تھے جبکہ اس سے پہلے سرکاری جگہوں پر قبضہ کرکے بنائے گئے دفاتر منہدم بھی کر دیئے گئے تھے، ایم کیو ایم پاکستان نے گذشتہ روز کچھ دفاتر کھولنے کی کوشش کی مگر انتظامیہ کی ہدایت پر پولیس نے اسے ناکام بنا دیا، گذشتہ روز ایم کیو ایم پاکستان کی طرف سے میڈیا کو دعوت نامہ جاری کیا گیا تھا کہ ڈاکٹر فاروق ستار ہفتے کے روز لطیف آباد نمبر 7 میں میئر بلدیہ کے کیمپ آفس میں پریس کانفرنس سے خطاب کریں گے یہاں بھی ایم کیو ایم کے دفاتر تھے جن کو کھول کر کیمپ آفس کا نام دیا گیا تھا مگر پولیس نے یہ دفاتر بھی بند کرا دیئے، اس کے بعد ڈاکٹر فاروق ستار کی پریس کانفرنس دوسری جگہ منتقل کر دی گئی تھی مگر پھر میڈیا کو بتایاگیا کہ پریس کانفرنس منسوخ کر دی گئی ہے اور ملک کی صورتحال کے پیش نظر ڈاکٹر فاروق ستار حیدرآباد نہیں آ رہے ہیں، ایم کیو ایم کے سیل دفاتر غیرقانونی طور پر کھولنے میں ملوث افراد کے خلاف پولیس نے کوئی کاروائی نہیں کی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ اول