رانا ثناءاللہ کی قسمت کا فیصلہ اب کون کرے گا؟ تحریک لبیک کا حکومت سے معاہدہ ہو گیا، رانا ثناءاللہ کے پیروں تلے زمین نکل گئی

رانا ثناءاللہ کی قسمت کا فیصلہ اب کون کرے گا؟ تحریک لبیک کا حکومت سے معاہدہ ...
رانا ثناءاللہ کی قسمت کا فیصلہ اب کون کرے گا؟ تحریک لبیک کا حکومت سے معاہدہ ہو گیا، رانا ثناءاللہ کے پیروں تلے زمین نکل گئی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تحریک لبیک اور حکومت کے درمیان معاہدے کے بعد اسلام آباد میں جاری دھرنا ختم کرنے کا اعلان کر دیا گیا ہے اور اس کیساتھ ہی تحریک لبیک کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی نے رانا ثناءاللہ سے متعلق حکومت کیساتھ ہونے والے معاہدے کی ایسی تفصیلات بھی بتا دی ہیں کہ ان کے پیروں تلے زمین نکل جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔”کسی صحافی کو یہاں سے نہ جانے دو جب تک۔۔۔“ پریس کانفرنس کے دوران خادم رضوی بپھر گئے، صحافیوں کو ’سخت‘ حکم دیدیا

علامہ خادم حسین رضوی نے دھرنے کے شرکاءکو معاہدہ پڑھ کر سناتے ہوئے کہا کہ ”وزیر قانون پنجاب کے متنازعہ بیان پر تحریک لبیک کی جانب سے درج ذیل علماءکرام اور مفتیان کرام پر مشتمل ایک بورڈ تشکیل دیا جائے گا جس کے روبرو وہ اپنا موقف پیش کریں گے اور یہ بورڈ جو بھی فیصلہ کرے گا وہ وزیر قانون کو من و عن قبول کرنا ہو گا۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔حکومت اور تحریک لبیک یا رسول اللہﷺ میں معاہدہ طے پا گیا، 22 روزہ دھرنا ختم کرنے کا اعلان

پیر محمد افضل قادری، پیر سید حسین الدین شاہ، پیر سید ضیاءالحق شاہ، چیئرمین رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان، حافظ محمد عبدالستار سیدی، مفتی محمد فضل سبحان قادری اور مفتی محمد صدیق قادری بورڈ کے ارکان ہوں گے۔“

مزید : قومی