وزیر مملکت پیر محمد امین الحسنات شاہ نے استعفیٰ کی افواہوں کی تردید کر دی

وزیر مملکت پیر محمد امین الحسنات شاہ نے استعفیٰ کی افواہوں کی تردید کر دی
وزیر مملکت پیر محمد امین الحسنات شاہ نے استعفیٰ کی افواہوں کی تردید کر دی

  

بھیرہ (ویب ڈیسک) تحریک لبیک کیخلاف دھرنا آپریشن پر وزیر مملکت پیر محمد امین الحسنات شاہ نے استعفیٰ دینے کی افواہوں کی تردید کر دی۔ انہوں نے کہا کہ میں اس آپریشن کی مذمت کرتا ہوں اگر میرا استعفیٰ دینے سے تحریک کو کوئی فائدہ ہوتا ہے تو میں استعفیٰ دینے کو تیار ہوں۔ روزنامہ دنیا کے مطابق انہوں نے کہا کہ حکومت سے 12میں سے 11 مطالبات تسلیم کرانے میں میرا بنیادی کردار رہا ،زاہد حامد کے استعفیٰ سے کیا حکومت گر جائے گی۔ علما ءکا فرض تھا کہ وہ سخت قانون سازی کا مطالبہ کرتے کہ آئندہ جو بھی اس قانون کو چھیڑے اس کو عمر قید یا موت کی سزا دی جائے۔ماضی میں پیر فضل حق اور حنیف طیب نے بھی استعفیٰ دیا تھاجس کا نقصان آج اہلسنت کو ہو رہا ہے۔ پیر امین الحسنات شاہ نے کہا کہ میرا استعفیٰ نہ دینے کا فائدہ اہلسنت کو ہے ہم پارلیمنٹ میں بیٹھ کر اپنا بھر پور کردار ادا کرسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ختم نبوت پر ایمان ہمارا عقیدہ ہے اور اس کو چھیڑنے والا مسلمان نہیں انہوں نے کہا کہ راستے بند ہیں ورنہ میں خود اسلام آباد جاتا۔

مزید : اسلام آباد