’خدا نے مجھے عقل دی اور طیارہ گرنے سے چند لمحے پہلے یہ کام کر کے میں زندہ بچ گئی‘ طیارہ حادثے میں71 مسافر ہلاک لیکن ائیرہوسٹس زندہ بچ گئی، کیا کام کیا تھا؟ جان کر ہر شخص دنگ رہ جائے

’خدا نے مجھے عقل دی اور طیارہ گرنے سے چند لمحے پہلے یہ کام کر کے میں زندہ بچ ...
’خدا نے مجھے عقل دی اور طیارہ گرنے سے چند لمحے پہلے یہ کام کر کے میں زندہ بچ گئی‘ طیارہ حادثے میں71 مسافر ہلاک لیکن ائیرہوسٹس زندہ بچ گئی، کیا کام کیا تھا؟ جان کر ہر شخص دنگ رہ جائے

  

برازیلیا(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ سال 28نومبر کے روزلامیا(LaMia)ایئرلائنز کی ایک پرواز کولمبیا میں گر کر تباہ ہو گئی جس میں برازیلین فٹ بال ٹیم سفر کر رہی تھی۔ اس میں مسافروں اور عملے سمیت کل 77افراد سوار تھے جن میں سے 71لقمہ اجل بن گئے جبکہ 6معجزانہ طور پر محفوظ رہے۔محفوظ رہنے والوں میں جہاز کی28سالہ ایئرہوسٹس زیمیناسواریز (Ximena Suarez)بھی شامل تھی۔ حادثے کا ایک سال مکمل ہونے پر بولیویا کی شہری زیمینا نے اپنے محفوظ رہنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا ہے کہ ”جب طیارہ زمین کی طرف گرنا شروع ہوا تو میں لاشعوری طورپر بھاگ کر جہاز کے بالکل پچھلے حصے میں چلی گئی تھی۔ میں سمجھتی ہوں کہ مجھ سے یہ کام خدا نے کروایا تھا کیونکہ اسے میری زندگی محفوظ رکھنا تھی۔“

پانچ سال قبل موت پانے والے والد کا اپنی بیٹی کو آخری پیغام

زیمینانے ہسپتانوی اخبار ایل پیز سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ ”حادثہ اس قدر خوفناک تھا کہ میں اس کے بعد سے بے خوابی کی بیماری کا شکار ہو چکی ہوں اور مجھے سونے کے لیے نیند کی گولیاں استعمال کرنی پڑتی ہیں۔آج بھی وہ لمحات ذہن میں آتے ہیں تو میں خوف سے کانپ اٹھتی ہوں۔میں نیند کی گولیاں چھوڑنے کی کوشش کرتی ہوں لیکن نہیں چھوڑ سکتی۔لوگ اس حادثے میں بچ جانے پر مجھے خوش قسمت کہتے ہیں اور مجھے حاضر دماغ کہتے ہیں کہ میں آخری وقت میں بھاگ کر جہاز کے پچھلے حصے میں چلی گئی، لیکن میں انہیں کہتی ہوں کہ یہ سب خدا کی طرف سے ہوا، اسی نے مجھے اس ہولناک حادثے میں محفوظ رکھا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس