سلیم سیف اللہ خان کا 18ویں ترمیم کے بعد گیس اور تمباکو کی فصل کا اختیار صوبوں کو دینے کا مطالبہ

سلیم سیف اللہ خان کا 18ویں ترمیم کے بعد گیس اور تمباکو کی فصل کا اختیار صوبوں ...

صوابی( بیورورپورٹ)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما اور سابق وفاقی وزیر سلیم سیف اللہ خان نے وفاق سے مطالبہ کیا ہے کہ آٹھارویں تر میم کے بعد پیسکو اور لیسکو کے علاوہ گیس اور تمباکو کی فصل کا اختیار بھی صوبوں کو حوالے کیا جائے کیونکہ مذکورہ ادارے مرکز نہ چلا سکتی ہے اور نہ ہی وفاق کے ساتھ ان اداروں کو چلانے کے لئے وسائل دستیاب ہے لہٰذا فوری طور پر ان اداروں کو صوبوں کو حوالے کیا جائے اور یہ آئینی تقاضا بھی ہے پیر کے روز اسلام آباد میں اپنی رہائش گاہ پر مسلم لیگ ن کے صوبائی رہنما ملک سید عمران کی قیادت میں وفد سے گفتگو کر تے ہوئے سلیم سیف اللہ خان نے کہا کہ جس طرح محکمہ پولیس صوبائی حکومتوں کے پاس ہے اسی طرح جن صوبوں میں بجلی ، تمباکو ، کپاس اور دیگر فصل پیدا ہو تے ہو اس کا اختیار مرکز صوبوں کو منتقل کریں جب کہ خارجہ پالیسی ، ریلوے وغیرہ محکموں میں اصلاحات کر کے وفاق کے پاس ہونا آئینی اور قانونی تقاضا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں دھماکے بھارت کر رہا ہے وہ ہماراسب سے بڑا دشمن ہے بھارت پاکستان سے ہاتھ نکال لیں انہوں نے کہا کہ امریکہ کا افغانستان سے نکلنے سے ہی خطے میں امن آسکتا ہے انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اپنے وطن میں امن بحال رکھنے میں اپنا کر دار ادا کریں انہوں نے کہا کہ اورکزئی ایجنسی ، کراچی میں چینی کونسلیٹ ، مولانا سمیع الحق اور ایس پی طاہر داوڑ پر حملوں اور شہادتوں کی مذمت کر تے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی ظلم و زیادتی ہے #

مزید : کراچی صفحہ اول