وزیراعظم کو مسلسل نااہلی اور ناکامی پراستعفیٰ دے دینا چاہیے، لیاقت بلوچ

وزیراعظم کو مسلسل نااہلی اور ناکامی پراستعفیٰ دے دینا چاہیے، لیاقت بلوچ

  



ملتان (سٹی رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ حکومت کا دعویٰ ہے حکومت اور اسٹیبلشمنٹ ایک پیج پر ہیں لیکن چیف آف آرمی سٹاف کی مدت ملازمت میں توسیع یا آئندہ تین سال کے لیے نئی تقرری کا معاملہ حکومتی لاء ٹیم کی بدترین نااہلی اور ناکامی ہے۔معاشی ٹیم کے بعد قانونی ٹیم بھی نااہل ہے۔فوج قومی ادارہ ہے اسکے سربراہ کی تقرری کے لیے غیر سنجیدہ اور غیر ذمہ دارانہ اقدام کے سراسر عمران خان ذمہ دار ہیں۔آرمی چیف کی تقرری کا فیصلہ تو قانون(بقیہ نمبر27صفحہ12پر)

اور ضابطہ کے مطابق ہو لیکن وزیراعظم کو مسلسل نااہلی اور ناکامی پر استعفیٰ دے دینا چاہیے۔ملتان میڈیا سنٹر سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں سندھ اور بلوچستان سے علماء وفد اور سیاسی کارکنان کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ پی ٹی آئی حکومت کا اعتبار اور اعتماد عمران خان نے خود ختم کردیا ہے۔وزیراعظم اعلان کررہے ہیں کہ معیشت بہتر ہوگئی دوسری جانب صد رپاکستان کہہ رہے ہیں معیشت بہتر نہیں ہورہی۔صدر،وزیراعظم اور وزراء میں سے کوئی بھی ملکی معاملات میں سدھار لانے کی بجائے بیان بازی کی مہارت اور ایک دوسرے سے بڑ ھ کر بڑھک مارنے میں مصروف ہیں۔وزیراعظم اپنے ہر اعلان،اقدام،بیان اور فیصلے سے یو ٹرن لیتے ہیں اسی وجہ سے حکومت کے کسی معاملہ کا یقین نہیں رہا۔لیاقت بلوچ نے کہا کہ مہنگائی،بے روزگاری،لاقانونیت،رشوت اور کرپشن عوام کے لیے جان لیوا نظام بن گیا ہے۔اقتصادی نظام ناگفتہ بہ ہے۔سیاسی انتشار اور عد م استحکام بڑھ رہا ہے۔حالات سدھارنے کی تدبیر یں الٹی ہورہی ہیں۔

لیاقت بلوچ

مزید : ملتان صفحہ آخر