سکیورٹی گارڈ قتل کیس،ملزمان8سال بعد استغاثے سے بری

سکیورٹی گارڈ قتل کیس،ملزمان8سال بعد استغاثے سے بری

  



لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج اکرام الحق نے پنجاب یونیورسٹی کے مبینہ طور پر قتل ہونے والے سیکیورٹی گارڈ عمران کے 8سالہ پرانے استغاثہ کا فیصلہ سنا دیا،عدالت نے کیس میں نامزد پنجاب یونیورسٹی کے سابق ار او جاوید سمی،کمال گل،شوکت علی،ظفر بخاری اور سب انسپکٹر میاں خان کو جرم ثابت نہ ہونے پر قتل کے استغاثے سے بری کر دیا،تمام افراد کے خلاف مقتول عمران کے بھائی رمضان نے استغاثہ دائر کررکھاتھا،عدالت میں یہ کیس 8سال سے زیر سماعت رہا،بری ہونے پر ملزمان کاکہناہے کہ ان کے 8سال ضائع ہوگئے،ان کا کون حساب دے گا، ان پرجھوٹا الزام لگا یاگیاتھاجس کی وجہ سے وہ عدالتوں کے چکر لگاتے رہے۔

مزید : علاقائی