ٹیلی نار پاکستان کی جانب سے مذہبی منافرت کے واقعہ کی مذمت

ٹیلی نار پاکستان کی جانب سے مذہبی منافرت کے واقعہ کی مذمت

  



لاہور(پ ر)ٹیلی نار پاکستان نے ناروے کے شہر کرسٹین سینڈ میں قرآن مجید کی بے حرمتی کے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور اس افسوس ناک واقعہ پر تحفظات کا اظہار کرتے ہیں۔ہم اپنے تمام ہم وطنوں سے اظہار یک جہتی کرتے ہوئے  اپنے عزم کی یقین دہانی کرواتے ہیں۔پی ٹی اے کے جعلی نوٹس کی گردش کے بعد جس سے پی ٹی اے نے بھی لاتعلقی کا اظہار کیا ہے، اپنی سروسز بند ہونے سے متعلق افواہوں کی تردید کرتے ہوئے کمپنی نے اس طرح کی افواہوں اور جعلی پیغامات کو نظر انداز کرنے پر اپنے صارفین کا شکریہ ادا کیا ہے۔ ٹیلی نار پاکستان ملک کے سرکردہ ٹیلی کام آپریٹرز میں سے ایک ہے جس نے ملک میں  2005ء میں اپنے کاروباری آپریشنز کا آغاز کیا۔ کمپنی نے ملک میں 4.5 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کی اور اب تک قومی خزانے میں 310 ارب روپے کی خطیر رقم بھی جمع کروا چکا ہے۔ ٹیلی نار پاکستان 45 ملین سیلولر سبسکرائبرز کو سروسز کی فراہمی کے لئے ملک میں بلواسطہ اور بلا واسطہ لاکھوں افراد کو روزگار فراہم کر رہا ہے۔اور جدت، صارفین پر توجہ مرکوز کرنے کے ساتھ ساتھ سماجی طور پر  بااختیار بنانے کے اقدامات کے ذریعے پاکستان کی ڈیجیٹل تبدیلی کی قیادت بھی کر رہا ہے۔ٹیلی نار پاکستان نے ملک سے اپنی طویل المدتی وابستگی کا اعادہ کیا ہے اور وہ آنے والے  برسوں  میں اپنے قابل قدر صارفین کو معیاری ٹیلی کام اور ڈیجیٹل خدمات کی فراہمی جاری رکھے گی۔ 

مزید : کامرس