منشیات کے خاتمے کیلئے سیکورٹی اداروں سے تعاون پرتیار ہیں‘ سراج قاسم تیلی

منشیات کے خاتمے کیلئے سیکورٹی اداروں سے تعاون پرتیار ہیں‘ سراج قاسم تیلی

  



کراچی (این این آئی) بزنس مین گروپ (بی ایم جی) کے چیئرمین و سابق صدر کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (کے سی سی آئی) سراج قاسم تیلی نے شہر میں منشیات کی رسائی پر قابو پانے باالخصوص تعلیمی اداروں میں نئی نسل کو تباہی سے بچانے کے لیے وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی جانب سے اعلیٰ سطحی ٹاسک فورس کے قیام کا خیرمقدم کیا ہے۔ایک بیان میں سراج قاسم تیلی نے کراچی کے کونے کونے میں منشیات سے متعلق بڑھتی سرگرمیوں پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے تجویز دی ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو تمام تعلیمی اداروں کے داخلی و خارجی دروازوں پر سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب سمیت سخت اقدامات کرنا ہوں گے جہاں منشیات فروش اپنی غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث پائے جاتے ہیں لہٰذا ایسے عناصر جو نئی نسل کو تباہ کرنے کے ذمہ دار ہیں ان کی کیمروں کے ذریعے نشاندہی کرتے ہوئے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔انہوں نے کہاکہ سندھ حکومت منشیات کے استعمال کے نقصانات کے بارے میں آگاہی فراہم کرنے کے لیے مہم کا آغاز کرے  اور ”منشیات کو نہ کہہ دو“ کے بینرزتمام تعلیمی اداروں کے باہر آویزاں کیے جائیں اس کے علاوہ تعلیمی اداروں میں اور کراچی چیمبر میں بھی اس حوالے سے سیمینارز منعقد کیے جائیں جہاں ہم مختلف یونیورسٹیوں اور کالجوں کے طلبہ وطالبات کو اکھٹا کریں گے تاکہ نوجوانوں کو منشیات کے نقصانات سے متعلق بخوبی آگاہ کیا جاسکے جس سے یقینی طور پر مثبت نتائج برآمد ہوں گے۔سراج تیلی نے کہاکہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو فیملی تقریبات کو چھوڑ کر دیگر نجی پارٹیوں اور تقریبات پر کڑی نظر رکھنا ہوگی کیونکہ یہ بات مشاہدے میں آئی ہے کہ اس قسم کی پارٹیوں اور تقریبات میں نوجوانوں کی اکثریت شرکت کرتی ہے جو کہ غیرقانونی سرگرمیوں کا گڑھ ہوتی ہیں جہاں نشہ آور اشیاء اور دیگر جان لیوا منشیات کا استعمال ہوتا ہے۔

 جو ظاہر ہے منشیات فروش ہی فراہم کرتے ہیں لہٰذا یہ وہ جگہ ہے جہاں خاص توجہ دینے کی ضرورت ہے کیونکہ منشیات کی خریدو فروخت اور ترسیل ان ہی مقامات کے باہر سے ہی ہوتی ہوگی جہاں اس قسم کی پارٹیاں منعقد کی جارہی ہوں۔انہوں نے کہاکہ اس قسم کی تمام پارٹیوں کے منتظمین کو ایونٹ سے پہلے متعلقہ پولیس اسٹیشن کو آگاہ کرنے کا پابند کیا جائے اور اس امر کی یقین دہانی لی جائے کہ ایونٹ کے دوران کسی کو بھی نشے یا منشیات کے استعمال کی ہرگز اجازت نہیں ہوگی اور اس یقینی دہانی کے خلاف ورزی کی صورت میں منتظمین کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔انہوں نے کراچی کو منشیات سے مکمل طور پر پاک کرنے کے لیے سندھ حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو کے سی سی آئی کے مکمل تعاون کا یقین پیش کرتے ہوئے کہاکہ ملک کے اہم چیمبر ہونے کی حیثیت سے نئی نسل کو منشیات کے عادی ہونے سے بچانے کے لیے سندھ حکومت کی مدد کے لیے تیار ہیں اور کراچی کو منشیات سے پاک شہر بنانے میں مدد کرنے پر خوشی محسوس کریں گے۔

مزید : کامرس