عدلیہ سے لڑکر اور قوم کو چور چور کہنے سے حالات نہیں بدلیں گے:سراج الحق

عدلیہ سے لڑکر اور قوم کو چور چور کہنے سے حالات نہیں بدلیں گے:سراج الحق

  



لاہور(این این آئی) امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ جب حکومت نہیں چل رہی تو قبل از وقت انتخابات میں کوئی مضائقہ نہیں،حکومت اپنے لیے خود ہی قبر کھود رہی ہے، حکومت کے غیر سنجیدہ اقدامات کا شور آسمان پرسنائی دے رہا ہے،حکمرانوں نے کشمیر کاز کے ساتھ بے وفائی کی،تحریک انصاف کی حکومت بے مقصد اور بے منزل ہے، ایئر کنڈیشن ڈرائنگ روم میں بیٹھ کر کوئی سلطان ٹیپو نہیں بن سکتا، سلطان ٹیپو بننے کے لیے میدان میں نکلنا پڑتاہے، اپنی عدلیہ سے لڑ کر اور قوم کو چور چور کہنے سے حالات نہیں بدلیں گے، موجودہ حکمران بھی چند دن بعد کہہ رہے ہوں گے مجھے کیوں نکالا،کیا حکومت کا کام لنگرخانے بنا کر عوام کو قطار میں کھڑا کرنارہ گیا ہے، جب تک پارلیمنٹ نوجوانوں سے آباد نہیں ہوتی، پاکستان ترقی نہیں کرے گا، پارلیمنٹ سے کرپٹ جاگیرداروں کو نکال باہر کرنے کی ضرورت ہے، ایٹم بم نہیں نوجوان ہی پاکستان کی اصل طاقت ہیں،حکومت کی دوڑ دھوپ امریکہ، چین، آئی ایم ایف، ورلڈ بینک کو خوش رکھنا رہ گئی ہے، 22دسمبر کو اسلام آباد آرہے ہیں،بے حس حکمرانوں کوجگانے کی کوشش کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاک چائنہ دوستی سنٹر میں اسلامی جمعیت طلبہ کے زیر اہتمام ”روشن  ہے جہاں اپنا“ کے موضوع پر کیپٹل یوتھ ایکسپو سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔  سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ پاکستان کے سیاستدان دست و گریباں ہیں۔ وزیراعظم عدلیہ کو دبانے کی کوشش کر رہے ہیں۔حکومتوں نے نوجوانوں کا استحصال کیا، ان کی صلاحیتوں کو اپنے بنگلوں، کارخانوں اور سیاسی قوت کیلئے استعمال کیا۔ پاکستان کی خاطر عالم اسلام اور انسانیت کیلئے استعمال ہو، تمام حکمرانوں کے ادوار میں کرپشن کو فروغ ملا۔ 15 ماہ میں 115 یوٹرن لے چکے ہیں۔

سراج الحق

مزید : صفحہ آخر