پاکستان بار کونسل کی کل یوم سیاہ منانے کی کال واپس

  پاکستان بار کونسل کی کل یوم سیاہ منانے کی کال واپس

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)پاکستان بارکونسل نے سپریم کورٹ کی طرف سے چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کا نوٹیفکیشن معطل کئے جانے کے بعد کل28نومبر کو یوم سیاہ کے طور پر منانے کی اپنی کال واپس لے لی، اس سلسلے میں پاکستان بار کونسل کے وائس چیئرمین سید امجد شاہ کی طرف سے جاری کئے گئے بیان میں کہا گیاہے کہ انہوں نے ملک بھر کے وکلاء کو فوج کے سربراہ کی مدت ملازمت میں توسیع کے معاملہ پر 28نومبر کو یوم سیاہ منانے کی کال دی تھی،اب سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد وہ یہ کال واپس لی جارہی ہے،انہوں نے چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس آصف سعید خان کھوسہ کی سربراہی میں قائم تین رکنی بنچ کے فیصلے کوانتہائی قابل ستائش قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ عدالت عظمیٰ کا یہ حکم آئین کی روح کے عین مطابق ہے جو پاکستان بارکونسل سمیت ملک بھر کے وکلاء کے نقطہ نظر کی تائید کرتاہے،سپریم کورٹ اپنے فیصلوں کے ذریعے پہلے ہی طے کرچکی ہے کہ مدت ملازمت کے خاتمہ کے بعد دوبارہ نوکری نہیں کی جاسکتی اور نہ ہی ملازمت میں توسیع کی جاسکتی ہے۔انہوں نے عدالت کو یقین دلایا کہ وکلاء آئین کی بالادستی اور قانون کی حکمرانی کیلئے سپریم کورٹ کے ساتھ ہیں، پاکستان بارکونسل کے وائس چیئرمین نے جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے خلاف خصوصی عدالت کا فیصلہ رکوانے کیلئے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کرنے پر حکومت پاکستان کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔انہوں نے کہا کہ حکومت ایسے اقدامات کے بعدیہ دعویٰ کیسے کرسکتی ہے کہ وہ جمہوری عمل اور قانون کی حکمرانی پر یقین رکھتی ہے۔انہوں نے کہا کہ جنرل (ر)پرویز مشرف نے نہ صرف آئین توڑا بلکہ وہ سانحہ 12مئی 2007ء کے مقدمہ کے مفرور ملزم بھی ہیں۔

 کال واپس

مزید : صفحہ آخر