سٹیٹ لائف کارپوریشن  عملے کو سپیشل الاؤنس سے محروم  رکھنے پر جواب طلب

سٹیٹ لائف کارپوریشن  عملے کو سپیشل الاؤنس سے محروم  رکھنے پر جواب طلب

  



پشاور(نیوزرپورٹر)پشاور ہائی کورٹ نے سٹیٹ لائف کارپوریشن آف پاکستان کے ماتحت افسران وعملے کو سپیشل الاؤنس سے محروم رکھنے کیخلاف دائر رٹ پٹیشن پر متعلقہ حکام سے جواب طلب کرلیا، جسٹس قیصر رشید اور جسٹس احمد علی پر مشتمل دورکنی بینچ نے پٹیشنر ڈاکٹر اسحاق کیجانب سے اشرف علی خٹک ایڈوکیٹ کے تواسط سے دائر رٹ کی سماعت کی، دوران سماعت عدالت کو بتایا گیا کہ انکے موکل سٹیٹ لائف کارپوریشن آف پاکستان میں اسسٹنٹ جنرل منیجر کے عہدے پر فائز ہیں،درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ سٹیٹ لائف کے اعلیٰ افسران جن میں چیئرمین، وائس چیئرمین اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر شامل ہیں نے اپنے لیے سپیشل الاؤنس لگا رکھا ہے جبکہ دیگر افسران وملازمین کو اس سے محروم رکھا جارہا ہے جو آئین کے آرٹیکل 27کی خلاف ورزی ہے اوران ملازمین کیساتھ امتیاز ہے حالانکہ یہ تمام افسران ایک ہی جگہ کام کررہے ہیں اورانکا کیڈراورسنیارٹی بھی ایک ہے لہذا ہمیں بھی سپیشل الاؤنس کا مستحق ٹھہرایاجائے۔ دور کنی بینچ نے متعلقہ حکام سے وضاحت طلب کی کہ یہ افسران کیا خصوصی ڈیوٹی کررہے ہیں کہ جسکی بناء پرانہیں الاؤنس دی جارہی ہے جبکہ دیگر کو نہیں دیاجارہا۔ عدالت نے کیس کی سماعت 5دسمبرتک کیلئے ملتوی کردی۔ 

مزید : پشاورصفحہ آخر /ملتان صفحہ آخر