مسیحی برادری کا بھرتی آرڈر جاری نہ کرنے کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

مسیحی برادری کا بھرتی آرڈر جاری نہ کرنے کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  



 پشاور (سٹی رپورٹر)مسیحی برادری سے تعلق رکھنے والے صفائی کے عملے نے بھرتی ارڈرد جاری نہ کرنے اور یگر تحفظات کے حوالے سے پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر مطالبات درج تھے۔مظاہرے کی قیادت ہسپتالوں میں کام کرنے والے ملازمین کر رہے تھے۔اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ تین ماہ سے بھرتی کے نام پر نصیراللہ بابر ہسپتال اور ایل ار ایچ ہسپتال میں بغیر تنخواہ کی ڈیوٹی کرائی گئی مگر برتی نہ ہو سکی جبکہ تبدیلی حکومت نے گھر بیٹے افراد کو برتی کیا جسکی وجہ سے ہمارے چھولے ٹھنڈے پڑھ گئے اور ہماری حق تلفی ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس سے پہلے بھی ایل ارایچ انتظامیہ نے مسیحی برادری کے ندیم بھٹی کو انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایا تھا ۔انہوں نے صوبائی حکومت اور دیگر اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ مسیحی برادری کے مسائل ہنگامی بنیادوں پر حل کیے جائے اور ہسپتالوں میں برتی ارڈر جاری کیے جائے بصورت دیگر خودکشی پر مجبور ہوجائنگے۔ 

مزید : پشاورصفحہ آخر /ملتان صفحہ آخر