صوبے میں پہلے بریسٹ کینسر کا جدید ترین سکریننگ سنٹر جلد مکمل کیا جائیگا:ڈاکٹر ہشام

صوبے میں پہلے بریسٹ کینسر کا جدید ترین سکریننگ سنٹر جلد مکمل کیا ...

  



پشاور(سٹاف رپورٹر) وزیر صحت خیبر پختونخوا ڈاکٹر ہشام انعام اللہ خان نے کہا ہے کہ حکومت صوبے میں چھاتی سرطان کے مریضوں کو بہترین طبی سہولیات مہیا کرنے کے لئے کوشاں ہے اور بہت جلد قانون سازی کر کے اس مرض میں مبتلا خواتین کی بروقت تشخیص اور مفت علاج کیا جائے گا۔ وزیر صحت نے مزید کہا کہ انسٹیٹیوٹ آف ہیپاٹالوجی میں ایک منزل چھاتی سرطان کے مریضوں کے لئے مختص ہوگی جس میں خواتین کا مفت علاج کیا جائے گا۔ انہوں نے ہدایت کی کہ صوبے میں پہلے چھاتی کے سرطان کا جدید ترین سکریننگ سنٹر جلد ازجلد مکمل کیا جائے تاکہ اس مرض کی تشخیص بروقت کی جاسکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے چھاتی اور بچہ دانی سرطان کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب میں سینٹر ڈاکٹر مہر تاج روغانی، سیکٹری ہیلتھ انجینئر یحییٰ اخونزادہ، محکمہ صحت کے حکام سمیت ڈاکٹروں اور سماجی شخصیات نے بھی شرکت کی۔ ڈاکٹر ہشام انعام اللہ کا مزید کہنا تھا کہ خواتین ہمارے معاشرے کا لازمی جز ہیں جن کو مہلق بیماریوں سے بچانا ہمارا فرض بنتا ہے۔ خیبر پختونخوا میں چھاتی سرطان سے متاثرہ خواتین کے لئے بہترین علاج مہیاء کرنا ہے کیونکہ صوبے میں ہر سال نوے ہزار خواتین چھاتی کے کینسر کا شکار ہو تی ہیں جن میں سے سالانہ چالیس ہزار خواتین اس بیماری سے موت کے منہ میں چلی جاتی ہیں۔وزیر صحت نے کہا کہ محکمہ صحت  اس بیماری سے بچاؤ کے لئے اٹھائے جانے والے اقدامات کی بھرپور تعاون جاری رکھے گا کیونکہ اگر کسی گھر میں ایک عورت کو یہ مرض لاحق ہو جائے تو اسکی وجہ سے پورا گھرانہ پریشانی میں چلا جاتا ہے۔وزیر صحت ڈاکٹر ہشام انعام اللہ خان نے گرین سٹار مارکیٹنگ کے بریسٹ کینسر کے حوالے سے اقدامات کو سراہااور مہمانوں کا شکریہ ادا کیا وزیر صحت نے کہا کہ سب نے مل کر چھاتی سرطان کا خیبر پختونخوا سے خاتمہ کرنا ہے جس کے لئے ہر فرد کا کردار انتہائی اہمیت کا حامل ہے خواہ وہ ڈاکٹر ہو، ہیلتھ آفیشل یا بطور وزیر، ہم سب نے مل کر مریضوں کو بہتر سہولیات مہیا کرنی ہیں تاکہ زیادہ سے زیادہ قیمتی انسانی زندگیاں بچائی جا سکیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /ملتان صفحہ آخر