آرمی چیف کی ملازمت میں توسیع کیخلاف درخواست پر سماعت آج ہوگی

آرمی چیف کی ملازمت میں توسیع کیخلاف درخواست پر سماعت آج ہوگی
آرمی چیف کی ملازمت میں توسیع کیخلاف درخواست پر سماعت آج ہوگی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کے خلاف درخواست پر سماعت آج ہوگی۔چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بینچ کیس کی سماعت کرے گا۔اٹارنی جنرل انور منصور ،اعظم سواتی ،پارلیمانی سیکرٹری قانون و انصاف ملیکہ بخاری ،فروغ نسیم اور شہزاداکبرسپریم کورٹ پہنچ گئے۔

گزشتہ روز عدالت نے آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کی ملازمت میں توسیع کا نوٹیفکیشن معطل کرتے ہوئے آرمی چیف سمیت تمام فریقین کو نوٹسز جاری کیے تھے۔عدالت نے درخواست کو 184/3 کے تحت از خود نوٹس میں تبدیل کر دیا تھا۔عدالت نے مفاد عامہ کا معاملہ قرار دیتے ہوئے درخواست کو از خود نوٹس میں تبدیل کر دیا تھا۔ سابق وزیر قانون فروغ نسیم بطور وکیل اٹارنی جنرل انور منصور خان کے ساتھ عدالت میں حکومتی موقف کا دفاع کریں گے۔

سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ایک موقع پر استفسار کیا کہ آرمی چیف کی توسیع کی مدت کیسے متعین کر سکتے ہیں، یہ اندازہ کیسے لگایا گیا کہ 3 سال تک ہنگامی حالات رہیں گے؟آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے خلاف درخواست جیورسٹ فاؤنڈیشن کی جانب سے دائر کی گئی تھی جس میں سیکریٹری دفاع اور دیگر کو فریق بنایا گیا تھا۔

واضح رہے کہ رواں سال 19 اگست کو جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں تین سال کی توسیع کی گئی تھی۔وزیراعظم آفس سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے موجودہ مدت مکمل ہونے کے بعد سے جنرل قمر جاوید باجوہ کو مزید 3 سال کے لیے آرمی چیف مقرر کردیا۔نوٹیفکیشن میں کہا گیا آرمی چیف کی مدت میں توسیع کا فیصلہ علاقائی سیکیورٹی کی صورتحال کے تناظر میں کیا گیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد