نقاب پوشوں نے والد پر اسلحہ بھی تانا،گاڑی کا دروازہ لاک ہونے سے مفتی صاحب بچ گئے،بیٹا حسین کفایت اللہ

نقاب پوشوں نے والد پر اسلحہ بھی تانا،گاڑی کا دروازہ لاک ہونے سے مفتی صاحب بچ ...
نقاب پوشوں نے والد پر اسلحہ بھی تانا،گاڑی کا دروازہ لاک ہونے سے مفتی صاحب بچ گئے،بیٹا حسین کفایت اللہ

  



مانسہرہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)مفتی کفایت اللہ کے بیٹے حسین کفایت اللہ نے کہا ہے کہ مفتی صاحب ہمارے ساتھ اسلام آبادسے مانسہرہ جا رہے تھے ،5نقاب پوش افرادنے کارکوٹکر مارنے کے بعد تشدد کیا، نامعلوم ملزموں نے والد صاحب کو گاڑی سے اتارنے کی کوشش کی اور ان پر ملزموں نے اسلحہ بھی تانا ،گاڑی کا دروازہ لاک ہونے سے مفتی صاحب بچ گئے ۔

جمعیت علمائے اسلام ف (جے یو آئی ) کے مرکزی رہنما مفتی کفایت اللہ پر مانسہرہ انٹرچینج کے قریب قاتلانہ حملہ ہوا ہے،جس میں انکا بازو مکمل فریکچر ہے ،پولیس نے حملے کا مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /خیبرپختون خواہ /مانسہرہ