آئی جی سندھ کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی خبریں بے بنیاد ہیں:مرتضیٰ وہاب

آئی جی سندھ کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی خبریں بے بنیاد ہیں:مرتضیٰ وہاب
آئی جی سندھ کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی خبریں بے بنیاد ہیں:مرتضیٰ وہاب

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی کےرہنمااورسندھ حکومت کےترجمان بیرسٹر مرتضی وہاب نےکہاہےکہ آئی جی سندھ کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں،وزیراعلی مراد علی  شاہ نےسختی سےتردید کی ہے کہ اُنکی یوسف ٹھیلے والے سےکوئی ملاقات نہیں ہوئی،ایس ایس پیز کا کام پریس کانفرنس کرنا نہیں ہے۔

نجی ٹی وی کےمطابقسندھ پبلک سیفٹی کمیشن کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہسندھ پبلک سیفٹی کمیشن کا اجلاس نجی ارکان کی درخواست پربلایا گیا تھا اور یہ نبیل ہود بھائی کی ہلاکت سے متعلق تھا۔اُنہوں نے کہا کہ چھ ہزار اہلکاروں کو ریفریشر کورس کرائے گئے ہیں،یہ اْصولی طور پر طے ہوگیا ہے کہ ریفریشر کورس کے بغیر کسی پولیس اہلکار کو بڑا ہتھیار نہیں دیا جائیگا،چھ ہزار پستول پولیس کو فراہم کردئیے گئے ہیں مزید ساڑھے چار ہزار پستول پولیس کو دیئے جارہے ہیں، اجلاس میں پولیس کے کنڈکٹ کو بہتر کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔میڈیا کے سوالات کے جواب دیتےہوئے مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہوزیراعلی مراد علی  شاہ نےسختی سےتردید کی ہے کہ اُنکی یوسف ٹھیلے والے سےکوئی ملاقات نہیں ہوئی،ایس ایس پیز کا کام پریس کانفرنس کرنا نہیں ہے،میڈیا کے سامنے ملزمان کو لانے سے کیس پر منفی اثرات پڑتے ہیں، اگر کوئی اہم ملزم ہے تو اس پر اعلی حکام یا حکومتی نمائندہ میڈیا کو آگاہ کرسکتا ہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی