یونیورسٹی کے طلبہ کی ”شجرکاری صحت مند زندگی“ کے موضوع پر مہم ختم ہوگئی

یونیورسٹی کے طلبہ کی ”شجرکاری صحت مند زندگی“ کے موضوع پر مہم ختم ہوگئی

لاہور(خبر نگار) ادارہ علوم ابلاغےات پنجاب ےونےورسٹی کے ماسٹرز پروگرام ڈویلپمنٹ جرنلزم کے طلبہءوطالبات کی ©"شجر کاری صحت مند زندگی کی ضمانت"کے موضوع پر جاری مہم اپنے اختتام کو پہنچ گئی۔ دو مرحلوں کی اس مہم میں طلباءنے پہلے گورنمنٹ سلےمانےہ ہائی سکول مےں ایک آگاہی لےکچر کا انعقاد کےا۔جس مےں پنجاب ےونےورسٹی سنڈےکےٹ کے ممبر اور رکن صوبائی اسمبلی "ماجد ظہور" نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ سکول کے پرنسپل مبارک علی اوراساتذہ کےساتھ ساتھ طلبہءکی بڑی تعداد نے بھی اس مہم میں شرکت کی۔ےونےورسٹی کے طلبہ نے سکول میں بچوں کو لےکچر مےں درختوں اور شجر کاری کے حوالے سے آگہی دی اور کہا کہ ہم بچپن سے شجر کاری کی اہمیت کے حوالے سے نصاب میں بہت کچھ پڑھ چکے ہیں مگر افسوس اس بات کا ہے کہ عملی زندگی میں ہم اس پر عمل کرنے کے روادار نہیں ہیں۔ ہم مادہ پرستی کی زد میں اس قدر آ چکے ہیں کہ فرنیچر، لکڑی اور بڑی بڑی رہائشی سکیموں کی خاطر اپنے ہاتھوں اپنے مستقبل کو مسلسل تباہ کر رہے ہیں۔اس موقع پر اےم پی اے ماجد ظہورنے ادارے کے طلبہ کی اس کاوش کو سہراتے ہوے کہاکہ درخت صحت مند زندگی کی علامت ہےں ان کا کٹاﺅ زمےن کی تباہی،گلوبل وارمنگ اور بےمارےاں پھےلانے کا موجب بنتا ہے۔ےہ ہمارا قےمتی اثاثہ ہےں ۔ہر شہری پر فرض ہے کہ وہ اپنے گھروں اور ارد گرد کے علاقوں مےں درخت لگائے اور اس قےمتی اثاثے کو ضائع ہونے سے بچائے۔جبکہ سکول پرنسپل مبارک علی کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ اس آگاہی مہم سے سکول کے طلبہ کے علم میں مزےد اضافہ ہوگا جس کے ذرےعے ہم اپنے قےمتی اثاثے کی بھرپور حفاظت کر سکےں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4