بادامی باغ دو گروپوں کی فائرنگ میں 2راہگیروں کی ہلاکت لواحقین کا پولیس کیخلاف شدید احتجاج

بادامی باغ دو گروپوں کی فائرنگ میں 2راہگیروں کی ہلاکت لواحقین کا پولیس ...

  

                      لاہور( بلال چودھری) چند روز قبل بادامی باغ کے علاقہ میں لین دین کے تنازع پر دو گروپوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلہ میںجاں بحق ہونے والے 2 راہگیر وںکے لواحقین نے پولیس کی جانب سے ملزمان کو گرفتار نہ کرسکنے کے خلاف شیرشاہ روڈ عثمان چوک اور سبزی منڈی پل بلاک کر کے شدیداحتجاج کیا۔تفصیلات کے مطابق بادامی باغ کے علاقہ حسین پارک شیر شاہ روڈ عثمان چوک پر22اکتوبر کی رات 11بجے کے قریب ذاکر شاہ گروپ اورارشد گروپ کے مابین متنازع زمین اور علاقہ میں چودھراہٹ قائم رکھنے کے معاملے پر تصادم کے دوران فائرنگ کے تبادلہ میں3راہگیر شدید جبکہ دو معمولی زخمی ہو گئے ۔فائرنگ کا تبادلہ آدھا گھنٹہ تک جاری رہا جس کی وجہ سے زخمی راہگیروں میں سے دو محمد فاروق اور محمد سجاد موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے ۔گزشتہ روز ملزمان کی عدم گرفتاری پر اہل علاقہ اور مقتولین کے لواحقین نے پولیس کے خلاف احتجاج کیا۔مظاہرین نے پولیس اور ملزمان کے خلاف پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے ۔ نمائندہ "پاکستان "سے گفتگو کرتے ہوئے مقتولین کے ورثا اور دیگر مظاہرین نے کہا کہ پولیس ابھی تک ملزمان کو گرفتار کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے ،ہمیں انصاف فراہم کیا جائے اور ملزمان کو گرفتار کر کے انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے۔پولیس حکام کی جانب سے انصاف کی فراہمی اور ملزمان کی جلد گرفتاری کی ےقین دہانی پر مظاہرین پرُ امن طور پر منتشر ہو گئے۔

مزید :

علاقائی -