آئی ڈی پیز قبائل کا گرینڈ جرگہ، حکومت کو چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کر دیا گیا

آئی ڈی پیز قبائل کا گرینڈ جرگہ، حکومت کو چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کر دیا گیا
آئی ڈی پیز قبائل کا گرینڈ جرگہ، حکومت کو چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کر دیا گیا

  

 بنوں(مانیٹرنگ ڈیسک ) بنوں میں آئی ڈی پیز قبائل کے مشترکہ گرینڈ جرگے نے حکومت کو وزیرستان سے متعلق چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ وہ با عزت طریقے سے واپسی چاہتے ہیں وہ 18 کروڑ عوام کے لیے اپنے گھر بار چھوڑ کر آج آئی ڈٰی پیز کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔

تفصیلات کے مطابق آئی ڈی پیز ہ قبائل کا مشترکہ گرینڈ جرگہ بنوں کے علاقے ٹاﺅن شپ میں منعقد ہوا جس میں کثیر تعداد میں آئی ڈی پیز مشران نے شرکت کی ۔جرگے سے خطاب کر تے ہوئے مشران کا کہنا تھا کہ انہوں نے وزیرستان کیلئے چارٹر آف ڈیمانڈ حکومت کو پیش کردی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وہ با عزت طریقے سے واپسی مانگتے ہیں ،انکے قبائل کی تعداد 1 کروڑ 20 لاکھ ہے جنہوں نے 18 کروڑ عوام کیلئے قربانی دی اور وہ اپنے گھر بار چھوڑ کر آئی ڈی پیز کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں،انکے مسائل بہت زیادہ ہیں ،انہیں جو راشن دیا جا رہا ہے وہ جانوروں کے کھانے کا بھی نہیں ہے۔

انکا مزید کہنا تھا کہ انہیں ایف ڈی ایم اے جیسے کرپٹ محکمے کے حوالے کردیا گیا ہے اور موسم کی تبدیلی کی وجہ سے انہیں کوئی پیکج نہیں دیا گیا ہے ۔مشران کا کہنا تھا کہ انہیں آپریشن کا ٹائم فریم دیا جائے کیونکہ اس جنگ کی وجہ سے انکے 10 لاکھ سے زائد لوگ بے گھر ہوئے اور انکے بچوں کی تعلیم ضائع ہورہی ہے۔انکا کہنا تھا کہ ایسا ہی آپریشن جنوبی وزیرستان میں بھی شروع کیا گیا تھا ،آج 7 سال بھی اس آپریشن کے آئی ڈی پیز ابھی تک واپس نہیں جاسکے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ انکی واپسی پر پہلے مشران کو وہاں کا وزٹ کرایا جائے تاکہ نقصان کا تخمینہ لگایا جاسکے کیونکہ وہ پاکستان کی بقا کی خاطر ہجرت کرکے آئے ہیں، اگر انکے مطالبات پر عمل نہ کیا گیا تو محرم کے بعد متحد قبائل کا لاکھوں افراد کا دھرنا پشاور اور اسلام آباد میں ہوگا۔

مزید :

بنوں -اہم خبریں -