اسرائیل نے فلسطینیوں کے پبلک ٹرانسپورٹ استعمال کرنے پر پابندی عائد کردی

اسرائیل نے فلسطینیوں کے پبلک ٹرانسپورٹ استعمال کرنے پر پابندی عائد کردی
اسرائیل نے فلسطینیوں کے پبلک ٹرانسپورٹ استعمال کرنے پر پابندی عائد کردی

  

تل ابیب (مانیٹرنگ ڈیسک) اسرائیل نے مغربی علاقے میں چلنے والی بسوں پر فلسطینیوں کا سوار ہونا ممنوع قرار دے دیا ہے۔ یہ پابندی نومبر سے نافذالعمل ہوگی جس سے ہزاروں فلسطینی متاثرہوں گے ۔

تفصیلات کے مطابق ہزاروں فلسطینی اسرائیل کے تعمیراتی منصوبوں میں مزدوری کے لیے جاتے ہیںجنہیں یک ہی مخصوص کردہ راہداری سے آنے جانے کی اجازت دی گئی تھی تاہم اب تازہ پابندی کے بعد یہ اجازت بھی ختم ہوجائے گی اور ہزاروں فلسطینیوں کے بے روزگارہونے جانے کا امکان ہے ۔

فلسطینیوں کو اسرائیلی حکام نے اس امر کا پہلے ہی پابند بنا رکھا تھا کہ وہ جس بس پر صبح کے وقت سوار ہوں گے اسی بس سے واپسی کا سفر کریں گے لیکن اب اس اسرائیلی وزیر دفاع موشے یعلون نے فلسطینیوں کو پہلے سے دیے گئے حق سے بھی محروم کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ اسرائیلی اخبار ہیریٹز کے مطابق اب فلسطینی پبلک ٹرانسپورٹ بھی استعمال نہیں کر سکیں گے ۔

اخبار کے مطابق دوسرے ملکوں سے لاکر بسائے گئے یہودی آباد کار کافی عرصے سے فلسطینیوں کے اپنے ساتھ سفر کرنے کا سلسلہ روکنے کے لیے مطالبہ کر رہے تھے۔

انسانی حقوق کی تنظیموں نے اسرائیل کی اس امتیازی پابندی کو انسانی حقوق کی ایک اور خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

مزید :

انسانی حقوق -