دو پاکستانیوں نے فراڈ کی دنیا میں نئی تاریخ رقم کردی، میاں بیوی کو لوٹنے کیلئے ایسا طریقہ اپنایا کہ کوئی عام آدمی تصور بھی نہیں کرسکتا

دو پاکستانیوں نے فراڈ کی دنیا میں نئی تاریخ رقم کردی، میاں بیوی کو لوٹنے ...
دو پاکستانیوں نے فراڈ کی دنیا میں نئی تاریخ رقم کردی، میاں بیوی کو لوٹنے کیلئے ایسا طریقہ اپنایا کہ کوئی عام آدمی تصور بھی نہیں کرسکتا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) نوسرباز لوگوں کو لوٹنے کے لیے کئی طریقے اختیار کرتے ہیں مگر برطانیہ میں دو پاکستانیوں نے میاں بیوی کو لوٹنے کا ایک ایسا طریقہ ایجاد کر ڈالا کہ کبھی کسی کے وہم و گمان میں بھی نہ ہو گا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق مانچسٹر کے رہائشی 30سالہ سعید غنی اور 42سالہ عاطف محمود نے ایک کروڑ پتی شخص کی شناخت چوری کرکے اس کا گھر ہی فروخت کے لیے پیش کر دیا۔ اتفاق سے اس شخص کی بیٹی نے رئیل اسٹیٹ کمپنی کی برائے فروخت گھروں کی فہرست میں اپنا گھر بھی دیکھ لیا اور اپنے باپ کو مطلع کر دیا جس پر وہ ان فراڈیوں سے بچ گیا۔

دو گاڑیوں میں تصادم کی اطلاع پرریسکیو اہلکار پہنچا تو موقع پر پڑی لاش کو دیکھ کر پاﺅں تلے سے زمین ہی نکل گئی کیونکہ۔۔۔

رپورٹ کے مطابق اس گھر کی قیمت ساڑھے 7لاکھ پاﺅنڈز (تقریباً 10کروڑ روپے) تھی۔ ملزمان نے 62سالہ مینہ ٹو (Minh To)کی ڈاک ہائی جیک کی اور اس میں سے اس کی تمام شناخت چوری کر لی۔ پھر انہوں نے اس کا جعلی پاسپورٹ بنایا تاکہ اس کے گھر کی ملکیت ٹرانسفر کی جا سکے۔تاہم ان کا بھانڈہ پھوٹنے پر انہیں گرفتار کرکے عدالت میں پیش کر دیا گیا جہاں ان کا جرم ثابت ہو چکا ہے اور آئندہ ماہ انہیں سزا سنائی جائے گی۔

مزید : برطانیہ