عرب ملک میں نوجوان نے گھر والوں سے اپنی دوسری شادی کا سن کر خود کو مردانگی سے ہی محروم کردیا، وجہ کیا بنی؟ جان کر آپ کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

عرب ملک میں نوجوان نے گھر والوں سے اپنی دوسری شادی کا سن کر خود کو مردانگی سے ...
عرب ملک میں نوجوان نے گھر والوں سے اپنی دوسری شادی کا سن کر خود کو مردانگی سے ہی محروم کردیا، وجہ کیا بنی؟ جان کر آپ کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

  

شارجہ (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات میں مقیم ایک ایشیائی باشندے نے پسند کے خلاف شادی پر مجبور کئے جانے پر دلبرداشتہ ہوکر اپنے ساتھ ہی وہ ظلم کر ڈالا کہ جس کا تصور کرکے ہی انسان کانپ جائے۔

’اُس نے جسم فروش لڑکی کو پکڑ کر مجبور کیا کہ باتھ روم میں کموڈ زبان سے چاٹے اور پھر۔۔۔‘ سب سے خوفناک جرم کی شرمناک تفصیلات سامنے آگئیں

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق اس شخص کی ایک شادی پہلے ہی ہوچکی تھی اور اس کی اہلیہ اور دو بیٹیاں اس کے ملک میں ہی مقیم تھیں۔ گزشتہ کچھ عرصے سے گھر والوںکی طرف سے اس پر دوسری شادی کے لئے دباﺅ ڈالا جارہا تھا جس کے لئے یہ تیار نہیں تھا۔ رپورٹ کے مطابق جب اس پر دباﺅ بہت بڑھ گیا تو اس نے دلبرداشتہ ہوکر اپنے جسم کا مردانہ حصہ ہی کاٹ ڈالا۔ اپنے ہاتھوں اپنی مردانگی کاٹ دینے والے شخص کو اس کا بھائی فوری طور پر ہسپتال لے کر گیا، جبکہ کٹا ہوا عضو لفافے میں ڈال کر الکویتی ہسپتال پہنچایا گیا، تا ہم اس کی نازک حالت کے پیش نظر اسے القاسمی ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

ڈاکٹر یونس الشمسی اور ڈاکٹر احمد ابوالناجہ تین گھنٹے کے طویل آپریشن کے بعد اس کی جان بچانے میں کامیاب ہوگئے۔ ڈاکٹر یونس کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے کیریئر کے دوران پوشیدہ اعضاءکے درجنوں آپریشن کئے ہیں لیکن یہ ایک انوکھا واقعہ تھا جس میں پوشیدہ عضو جسم سے مکمل طور پر علیحدہ ہوچکا تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس