گندم کی بوائی کے دوران نہروں میں پانی کی فراہمی بحال رکھی جائیگی :وزیرآبپاشی پنجاب

گندم کی بوائی کے دوران نہروں میں پانی کی فراہمی بحال رکھی جائیگی :وزیرآبپاشی ...

 لاہور(کامرس رپورٹر ) صوبائی وزیر آبپاشی وچیئرمین پیڈامیاں یاور زمان نے کہا ہے کہ آئندہ گندم کی بوائی کے دوران نہروں میں پانی کی مکمل سپلائی بحال رکھی جائیگی تا کہ گندم کی کاشت میں کسانوں کو مشکلات پیش نہ آئیں اور بھر پور پیداوار حاصل ہو ، نومبر میں نہری پانی کی مکمل سپلائی بحال رکھنے کے لئے منگلا اور تربیلا کمانڈ کی نہروں میں پانی کی سپلائی وقتی طور پر معطل کی گئی ہے۔یہ بات انہوں نے اپنے دفتر میں ایک محکمانہ اجلاس کی صدارت کے دوران کہی ۔ اس موقع پر کنسلٹنٹ محکمہ آبپاشی ایم ایچ صدیقی کی جانب سے صوبائی وزیر کو آبی گزر گاہوں میں پانی کی موجودہ صورتحال کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔ اجلاس میں ڈائریکٹر انڈس واٹر ریگولیشن محمد حسنین خان ،جنرل مینجر پیڈا محمد اجمل میاں اور ڈپٹی جنرل مینجر افضل انجم طور کے علاوہ مختلف افسران نے شرکت کی۔وزیر آبپاشی میاںیاورزمان کو بتایا گیا کہ کم بارشیں ہونے کے سبب دریاؤں میں پانی کی کمی واقع ہو گئی ہے جس کے تحت نہروں میں پانی کی سپلائی وقتی طور پر روکی گئی ہے تا کہ آئندہ ماہ گندم کی بوائی کا عمل متاثر نہ ہونے پائے۔ صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ ماضی میں جب کبھی پانی کی کمی کا سامنا درپیش رہا تو محکمہ آبپاشی نے صورتحال کے مطابق نہروں کی وارہ بندی کی تا کہ ضرورت کے مطابق پانی کی سپلائی فراہم کی جا سکے۔بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ گندم بوائی کے حوالے سے واٹر سپلائی پروگرام کے بارے میں محکمہ زراعت کو بھی آگاہ کر دیا گیا ہے۔ صوبائی وزیرمیاں یاورزمان نے گندم بوائی سیزن کے دوران نہری پانی کی متواتر سپلائی بحال رکھنے کے لئے محکمہ آبپاشی کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات پر اپنے اطمینان کا اظہار کیا۔

اور ہدایت کی کہ زیر زمین کھارا پانی کے حامل علاقوں میں پانی کی سپلائی فراہم کرنے کے لئے تمام چیف انجینئرز کو ہدایت جاری کر دی جائیں تا کہ لائیو سٹاک و دیگر انسانی ضروریات کے لئے پانی دستیاب رہ سکے۔

مزید : کامرس