پنجاب آئی ٹی بورڈ نے عوامی مشاورت کیلئے پالیسی کا پہلا ڈرافٹ پیش کردیا

پنجاب آئی ٹی بورڈ نے عوامی مشاورت کیلئے پالیسی کا پہلا ڈرافٹ پیش کردیا

لاہور(پ ر)چیئر مین پنجاب آئی ٹی بورڈ نے تیسری راؤنڈ ٹیبل کانفرنس میں عوامی مشاورت کے لئے پنجاب آئی ٹی پالیسی کا پہلا ڈرافٹ پیش کیا۔ TechHUb Connect(پی آئی ٹی بی کے پراجیکٹ) نے راؤنڈ ٹیبل کانفرنس کا انعقاد کیا جس میں 120سے زائد اعلیٰ افسران، آئی ٹی سیکٹر کے ماہرین اور پنجاب بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ, پنجاب ریونیو اتھارٹی اور ٹریڈ کی ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کے ممبران سمیت اہم سرکاری نمائندگان نے شرکت کی۔ڈاکٹر عمر سیف نے کانفرنس میں شرکت کرنے والوں کو آئی ٹی پالیسی کے متعلق بریفنگ دی جو کہ شہریوں کی ICTsتک پہنچ، ڈیجیٹل فنانشل انکلوژن کی بہتری، معیار تعلیم، آنٹر پرینیور شپ، ٹیکسیشن، اور آئی ٹی اور الیکٹرانک ہارڈوئیر مینوفیکچرنگ سیکٹر میں سرمایہ کاری کے حصول جیسے معاملات کو مخاطب کرے گی۔ آئی ٹی پالیسی کے ذریعے حکومت ، انٹر نیٹ کو بنیادی ضرورت تسلیم کرتے ہوئے اس کے انفراسٹرکچر کی تیاری کے لئے عمل پیرا ہو گی۔ڈاکٹر عمر سیف نے یہ اعلان بھی کیا کہ PITBقومی سطح پر IT Censusکے لئے فنڈنگ باڈی کے طور پر کام کرے گا اور انڈسٹری اور تعلیمی اداروں کو PITBکی کاوشوں کی حمایت کرنے کی دعوت دی۔انہوں نے Digital Advocacy Task Forceکے قیام کا بھی اعلان کیا جو سائبر کرائم، معلومات تک رسائی، privacy، ہراسمنٹ اور Digital rights سے متعلق سفارشات مرتب کرے گا۔P@shaکی صدر، جہاں آرا نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ انہوں نے پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ اور حکومت پنجاب کیطرف سے آئی ٹی انڈسٹری کے لئے مستقل خدمات کی پزیرائی کی۔سی ای او NayaTel،وہاج سراج اورنیشنل آئی ٹی پالیسی 2000کی تیاری کے اہم رکن، سلمان انصاری نے بھی اس موقع پر خطاب کیااورپی آئی ٹی بی کے اقدام کے لئے خدمات فراہم کیں۔

کانفرنس میں شرکت کرنے والوں نے آئی ٹی پالیسی کی بھرپور حمایت کی اور مثبت آراء دیں۔

مزید : کامرس