دہشت گردی کے مکمل خاتمہ کیلئے حکومت کو سخت اور فیصلہ کن اقدامات اٹھانا ہونگے، چودھری ذوالفقار علی

دہشت گردی کے مکمل خاتمہ کیلئے حکومت کو سخت اور فیصلہ کن اقدامات اٹھانا ...

لاہور(جنرل رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ پنجاب یوتھ ونگ کے صدر چوہدری ذوالفقار علی پپن نے کہا ہے کہ کوئٹہ دہشت گردی نے پشاور آرمی سکول میں ہونے والی بربریت کی یادتازہ کردی ہے ، دہشت گردی کے مکمل خاتمہ کیلئے حکومت کو سخت اور فیصلہ کن اقدامات اٹھانا ہونگے۔

پولیس ٹریننگ سینٹر پر خودکش بمبار کا حملہ حکمران پارٹی کی اندرونی اور بیرونی سطح پر ناکام حکمت عملی اور ناکام پالیسی کا منہ بولتا ثبوت ہے ، اس امر کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز صوبائی آفس میں منعقدہ ایک میٹنگ میں بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر مسلم لیگ یوتھ ونگ لاہور کے صدر شیخ عمر بھی موجود تھے،چوہدری ذوالفقار علی پپن نے کہا ہے کہ عسکری قیادت کی دہشت گردی کے خلاف لڑی جانے والی جنگ کا میابی سے جاری ہے مگر کچھ نادہندہ قوتیں ہماری صفوں میں انتشار پیداکرنے کیلئے وقفے وقفے سے ہماری کمر میں چھراگھونپ رہی ہیں ان قوتوں کا خاتمہ کرنے کیلئے حکمرانوں کو سنجیدہ ہونا پڑے گا ،انہوں نے کہا کہ سماجی انصاف کے تقاضوں کو پورا کئے بغیرنہ پاکستان میں دہشت گردی ختم ہو گی اور انتشار ختم ہو گا ،دینی مدارس میں پڑھنے والے طلبہ اور تعلیم مکمل کرنے والے طالب علموں کو قانونی تحفظ دیا جائے کیونکہ بھوک اور ننگ نفرت کی آگ کو بھڑکاتی حکومت اس طبقے کو بے روزگاری سے محفوظ رکھنے کیلئے خالی کھولی مذاکرات کی بجائے عملی اقدامات اٹھائے ، انہوں نے کہا کہ اسلام اور پاکستان دشمن قوتیں ہمارے معاشرے کے پڑھے لکھے بے روز گارء نوجوانوں کو ڈالروں کا لالچ دے کر بمبار بنا رہے ہیں حکمران دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے بنیادی عنصر کی طرف توجہ دیں انصاف اور روزگار فراہم کرنے میں پاکستان میں دہشت گردی کا خاتمہ یقینی ہے اور بے روزگاری کے خاتمے سے ہماری نئی نسل بے راہ روی کا شکار نہیں ہو گی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4