خراب فرنیچر دینے پر شہری کا دکاندار کے خلافڈیڑھ لاکھ کا ہرجانہ

خراب فرنیچر دینے پر شہری کا دکاندار کے خلافڈیڑھ لاکھ کا ہرجانہ

لاہور(نامہ نگار)صارف عدالت میں شہری نے فرنیچر کی لکڑی ناقص دینے اور وارنٹی کے باوجود ٹھیک نہ کرنے پر فہد فرنیچر گلبرگ کے مالک کے خلاف ڈیڑھ لاکھ روپے ہرجانے کا دعوی دائر کردیا۔عدالت نے مذکورہ فرنیچر مالک سے 15نومبر کو جواب طلب کرلیاہے۔صارف عدالت میں شاہدرہ ٹاؤن کے رہائشی وحیدریاض نے موقف اختیار کیا ہے کہ اس نے گھر کافرنیچر تیار کرنے کے لئے فہد فرنیچر ہاوس کے مالک کو آڈر کیا جس نے فرنیچر تیار کرکے دیا اور وارنٹی 10سال کی دی اور کہا گیا کہ لکڑی اصل ہے۔

،10سال کے دوران اگر فرنیچر خراب ہوا تو ٹھیک کرکے دیا جائے گا۔ درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ تین ماہ میں ہی فرنیچر خراب ہونا شروع ہو گیا لکڑی نے اپنے آپ کو چھوڑنا شروع کردیا فوری فرنیچر کے مالک سے رابط کیا اس کو تبدیل کرنے یا ٹھیک کرانے کو کہا لیکن اس نے ٹال مٹول سے کام لیا فرنیچر خراب ہونے سے وہ ذہنی اذیت میں مبتلا ہو گیا ہے ،عدالت سے استدعا ہے کہ اسے ہرجانہ دلوایا جائے عدالت نے کیس کی سماعت 15نومبر تک ملتوی کردی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4