سستا آٹا خورد برد کرنیکا مقدمہ،سرکاری ملازمین اور نان بائی کی عدالت طلبی

سستا آٹا خورد برد کرنیکا مقدمہ،سرکاری ملازمین اور نان بائی کی عدالت طلبی

لاہور(نامہ نگار)سینئر سپیشل جج اینٹی کرپشن مرید حسین کی عدالت میں سستی روٹی سکیم کے تحت ملنے والے آٹے کے 56 توڑے خوردبرد کرنے کے کیس میں ملوث داتا گنج بخش ٹاؤن کے ملازم رمیض، محمد اشرف جنجوعہ ،ڈپٹی آفیسر رحمت فلور مل، بسمہ اللہ نان شاپ کے مالک عباس علی اور مقدمے کے مدعی محمد ایوب کو 10نومبر کو عدالت طلب کرلیاہے۔عدالت نے اینٹی کرپشن کی طرف سے سستی روٹی آٹا کیس میں ملوث ٹی ایم او داتا گنج بخش ٹاؤن کے ملازم رمیض احمد کو مقدمے سے خارج کرنے کی استدعا مسترد کر۔ محمد ایوب نے رمیض پر الزام لگایا کہ وہ داتا گنج بخش ٹاؤن میں ایک ہوٹل چلاتا ہے اس کو سستی روٹی سکیم کے تحت 56 توڑے آٹا لینے کا لائسنس دیا گیا ، بعض وجوہات کی بنا پر ایک ماہ وہ اپنے کوٹے سے 56 توڑے آٹا نہ لے سکا جو بعد میں کسی اور کو دے دیا گیا،

مالک عباس علی کو دے دیا ،درخواست پر اینٹی کرپشن نے مقدمہ رمیض کے خلاف درج کرلیا ہے لیکن بعد میں اینٹی کرپشن نے عدالت سے استدعا کی کہ مدعی ان کے پاس نہیں آیا لہذا اس کیس کو خارج کردیا جائے جس پرعدالت نے یہ استدعا مسترد کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر مذکورہ ملزمان سمیت مقدمہ کے مدعی سے جواب طلب کرلیا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4