فائرنگ سے قتل ہونے والا سماجی کارکن سپرد خا ک،ملزمان گرفتار نہ ہوسکے

فائرنگ سے قتل ہونے والا سماجی کارکن سپرد خا ک،ملزمان گرفتار نہ ہوسکے
 فائرنگ سے قتل ہونے والا سماجی کارکن سپرد خا ک،ملزمان گرفتار نہ ہوسکے

  

لاہور(اپنے کرائم رپورٹرسے)قلعہ گجر سنگھ کے علاقے میں دو روز قبل نامعلوم موٹرسائیکل سوار کی فائرنگ سے قتل ہونے والے سماجی کارکن کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دیا گیا تاہم ملزمان گرفتار نہ ہوسکے ۔تفصیلات کے مطابق قلعہ گجر سنگھ کے علاقے میں دو روز قبل نامعلوم موٹرسائیکل کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے معروف صحافی اور سماجی کارکن کی لاش پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دی گئی۔ بتایا گیا ہے کہ ملک کامران المعروف اے ڈی کامران ڈیوس روڈ پر ڈیوس پلازہ میں ٹریول ایجنسی کا کام کرتے تھے اور وقوعہ کے روز اپنے بیٹے عزیر اور دوست ایاز کے ہمراہ گھر جا رہے تھے، جیسے ہی ان کی گاڑی قلعہ گجر سنگھ بتی چو ک پر پہنچی اور انہوں نے ٹریفک سگنل بند ہونے کی وجہ سے روکی، ان کا پیچھا کرنے والے مسلح موٹرسائیکل سوار نے ان پر فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں ایک گولی ملک کامران کے سر میں لگی اور وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر دم توڑ گئے جبکہ ان کا بیٹا اور دوست معجزانہ طور پر محفوظ رہے۔ اس دوران نامعلوم موٹرسائیکل سوار ملزم موقع سے فرار ہو گیا۔ گزشتہ روز ان کی نماز جنازہ میاں رشید کینال بینک فتح گڑھ میں ان کی رہائش گاہ میں ادا کی گئی ۔

جس کے بعدمقامی قبرستان میں سپردخاک کر دیا گیا ۔ان کے بیٹے عزیر نے پولیس کو بتایا کہ اس کی والد کی کسی سے کوئی دشمنی نہ تھی ،نامعلوم موٹرسائیکل نے ان کو ہی فائرنگ کا نشانہ بنایااور فرار ہو گیا جبکہ پولیس کے مطابق واقعہ کسی پرانی دشمنی کا شاخسانہ لگتا ہے، اصل حقائق تفتیش کے بعد ہی سامنے آئیں گے۔

مزید : علاقائی