کوئٹہ کے اندو ہناک واقعہ کے بعد سکیورٹی کا ازسر نو جائزہ لیا جا رہا ہے، ناصر درانی

کوئٹہ کے اندو ہناک واقعہ کے بعد سکیورٹی کا ازسر نو جائزہ لیا جا رہا ہے، ناصر ...

مردان(بیورورپورٹ) خیبرپختون خوا کے انسپکٹر جنرل آف پولیس ناصرخان درانی نے کہاہے کہ کوئٹہ کے اندوہناک واقعے کے بعد پشاور اورمردان انہتائی حساس ہیں اور سیکورٹی کا ازسر نوجائزہ لیاجارہاہے، صوبے کے تمام اضلاع میں پولیس اسسٹنس لائنز قائم کئے جارہے ہیں تاکہ مقدمات کے حوالے سے شہریوں کے رومزہ مشکلات اور تکالیف کا خاتمہ ہوں جبکہ ڈی آر سی کو از سر تشکیل دیاجارہاہے وہ مردان میں پولیس اسسٹنس لائنز کے افتتاح کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کررہے تھے ڈی آئی جی اعجاز احمد خان،ڈی پی اوفیصل شہزاد اور ایس پی اپریشن شفیع اللہ گنڈاپور بھی اس موقع پر موجودتھے آئی جی خیبرپختون خوا نے کہاکہ کوئٹہ پولیس ٹریننگ کالج میں دہشت گرد حملے کے بعد سیکورٹی کا جائز ہ لینے کے لئے طورو پولیس سکول میں آر پی اوز کا اجلاس ہو ا جس میں سیکورٹی کا ازسر نوجائزہ لیاگیا ان کا کہناتھاکہ پشاور ویلی پہلے سے حساس تھی تاہم کوئٹہ واقعے کے بعد پشاور اورمردان انہتائی حساس ہیں انہوں نے کہاکہ پولیس اختیارات ان کے پاس عوام کی امانت ہے اورکے پی پولیس تمام سیاسی مداخلت سے آزاد ہے پولیس کی دوہی پارٹیاں یعنی مدعی اور ملزم ہے انہوں نے کہاکہ پشاور اور مردان پہلے سے حساس تھے تاہم کوئٹہ کے اندوہناک واقعے کے بعد سیکورٹی کا ازسر نوجائزہ لیاجارہاہے ناصر خان درانی نے کہاکہ پولیس اسسٹنس لائنز کا دائرہ دیگر اضلاع تک بڑھایاجائے گا جس کا مقصد شہریوں کو چھوٹے موٹے مسائل اور شکایات کے حوالے سے مقدمات کے اندراج میں سہولیات دینا ہے انہوں نے کہاکہ ڈی آرسی (مصالحتی کمیٹیاں ) ازسر نو تشکیل دی جارہی ہیں تاکہ وہ مزید موثرہوں قبل ازیں آئی جی جب پولیس اسسٹنس لائنزکے افتتاح کے لئے پہنچے تو پولیس کے چاک وچوبند دستے نے انہیں سلامی دی اورگارڈ آف آرنز پیش کیا آئی جی اسسٹنس لائنزکے مختلف حصوں میں گئے اور معلومات حاصل کیں دریں اثناء انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخواہ ناصرخان درانی نے مردان میں ڈی آر سی(مصالحتی کمیٹی دفتر) تھانہ سٹی، پولیس کلب (پولیس لائن ) ، انیکسی ہال اور ایم ٹی پولیس لائن کا بھی دورہ کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر