ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کے حقوق عصب کرنے کی اجازت نہیں اعزار المک افکاری

ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کے حقوق عصب کرنے کی اجازت نہیں اعزار المک افکاری

اراکین صوبائی اسمبلی محمد علی، اعزازالملک افکاری، سید گل اور کوہستان ،دیر اور چترال کے منتخب ناظمین کی قیادت میں سوات، بحرین ،کالام،دیر اور کوہستان کے 70رکنی وفد نے لوگل گورنمنٹ کانفرنس پشاور میں خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر بلدیات اور صوبائی وزایر خذانہ مظفر سید سے ملاقات کی او ر ملاکنڈ ڈویژن میں جنگلات رائلٹی و دیگر مسائل کے بارے میں تفصیلی گفتگو کی۔وفد نے صوبائی وزراء کو جنگلات کے رائلٹی کے سلسلے میں تشکیل کی گئی کمیٹی کی اب تک عدم دلچسپی، 80%جنگلات رائلٹی اور فارسٹ پالیسی کی منظوری کا پر زور مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہماری آئندہ نسلوں کی بقاء کا مسئلہ ہے لہذا صوبائی حکومت اس میں خصوصی دلچسپی لے کر یہ مسئلہ فوری حل کرے۔ اس موقع پر صوبائی وزراء نے وفد کودرپیش مسئلے کے حل کی مکمل یقین دہانی کراتے ہوئے بتایا کہ ملاکنڈ ڈویژن کی ترقی و خوشحالی اور عوام کی جائز حقوق کی راہ میں کوئی رکاؤٹ برداشت نہیں کی جائے گی اور ہم عوام کے ساتھ ہیں اور ملاکنڈ ڈویژن کے جائز حقو ق کے حصول کے لئے ہم آخری تک جائیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ وہ اس سلسلے میں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک سے فوری طور رابطہ کریں گے اور کمیٹی کو فعال بنا کر جنگلات مالکان کے حقوق کے لئے ضروری اقدامات بے اٹھائیں گے۔انہوں نے کہا کہ انشاء اﷲ ان کا دیرینہ مسئلہ بہت جلد حل ہوجائے گاْ۔صوبائی وزراء نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن اور سوات کے عوام نے ماضی میں امن و امان کی بحالی اور دہشتگردی کے خاتمے میں تاریخی کردار ادا کرتے ہوئے جان و مال کی قربانیاں دی ہیں جسے فراموش نہیں کیا جا سکتا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر