نیب ملتان کی ڈیڑھ سال کے دوران کروڑوں روپے کی ریکوریاں ،میگا سکینڈلز میں ملوث 10ملزم گرفتار

نیب ملتان کی ڈیڑھ سال کے دوران کروڑوں روپے کی ریکوریاں ،میگا سکینڈلز میں ...

ملتان (نمائندہ خصوصی )نیب ملتان نے اپنے قیام سے اب تک 16ارب80کروڑ روپے مالیت کے میگا سیکنڈلز پر ہاتھ ڈالا ہے ۔گزشتہ ڈیڑھ سال کے دوران واپڈا ایمپلائز کواپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی ملتان کے سیکرٹری سعید احمد خان کے پونے دو ارب کی کرپشن ،منسٹری آف فنانس اینڈ اکنامک افےئرز 1ارب 19کروڑ ،بی زیڈ یو لاہو کیمپس کے قیام میں 96کروڑ ،سابق ایم پی اے ملک رفیق کھر کی 40کروڑ روپے ،نیشنل بینک مظفرگڑھ میں پنشن فراڈ کیس میں 45کروڑ روپے ،بی زیڈ یو کے شعبہ فاصلاتی نظام تعلیم میں 20کروڑ روپے ،میپکو نادہندگان ،نیشنل سیونگ سنٹر ملتان میں 59لاکھ روپے ،سابق ایم ڈی واسا ملک تصدق حسین کے خلاف 50کروڑ روپے مالیت ،ممبران مینجمنٹ کمیٹی واپڈ اٹاؤن ملتان 22کروڑ 90لاکھ میپکو افسران اور اہلکاروں کی 30کروڑ روپے ،ڈائریکٹر ٹاؤن پلاننگ ایم ڈی اے کی7کروڑ روپے ،انڈسٹریل اسٹیٹ ملتان میں 14کروڑ روپے ،صادق آباد کے پراپرٹی ڈوپلپرخادم حسین ،شفقت حسین کے خلاف 25کروڑ ،محکمہ انہار وہاڑی کے افسران اور اہلکاروں کے خلاف 77کروڑ 40لاکھ روپے ،محکمہ پولیس ضلع وہاڑی میں 99کروڑ روپے کی خورد برد ۔محکمہ انہار میں 3ارب روپے سے زائد مالیت کی اراضی پر قبضہ مافیا ریونیو ڈیپارٹمنٹ مظفرگڑھ کے افسران اور اہلکاروں کے خلاف 1ارب ۔پھاٹا ملتا ن میں 2ارب ،محکمہ انہار بہاولپور کے انجےئنرمسعود چغتائی ،واپڈا ٹاؤن 12کروڑ اور پٹواری ملک زاہد افضل کے خلاف 1کروڑ 10لاکھ روپے خورد برد کرنے کی انکوائریاں شروع ہیں ۔گزشتہ ڈیڑھ سال کے دوران نیب نے مذکورہ انکوائریوں کو تحقیقات میں تبدیل کیا اور میگا سیکنڈلز میں ملوث مرکزی کرداروں کو گرفتارکیا ان میں سے بی زیڈ یو کے لاہور کیمپس سکینڈل میں سابق وی سی خواجہ محمد علقمہ ،واپڈا ٹاؤن سکینڈل میں سعید احمد خان ،نیشنل بینک پنشن فراڈ کیس کے مرکزی کردار نذر موہانہ سمیت 10ملزمان کو گرفتار کیا ۔ان ملزمان میں کروڑوں روپے ریکوری کرکے سرکاری خزانے میں جمع کرادئیے نیب ملتان نے گزشتہ ڈیڑھ سال کے دوران کرپٹ ملزمان نے 44کروڑ 85لاکھ 54ہزار پلی بارگین ،رضا مندی (voluntry Return)اور ڈائریکٹ ریکوری کے ذریعے برآمد کرلیے ۔ان میں سے 24کروڑ 98لاکھ 70ہزار وی آر کے ذریعہ 2کروڑ 41لاکھ 80ہزار روپے پلی بارگین کے ذریعے وصول کیے ۔جبکہ نیب کی تحقیقات کے دوران ملزمان میں خورد برد کی گئی رقم برائے راست جمع کرادی یہ رقم 17کروڑ 44لاکھ49ہزار روپے بنتی ہے ۔اس حوالے سے ڈی جی نیب (ر)بریگیڈئیر فاروق ناصر اعوان نے میڈیا ٹاک کے دوران کہا کہ نیب کے بارے میں غلط تاثر پایا جاتا ہے کہ ملزمان سے مک مکا کر لیا جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ نیب نے میگا سیکنڈلز میں اربوں روپے ریکورکیے ہیں اور طاقتور سمجھے جانے والے ملزمان کو گرفتار کیا ہے ان ملزمان کی کرپشن کے بارے میں ان کے محکموں کو آگاہ کردیا جاتا ہے اگر کوئی ملزم دوبارہ اسی سیٹ پر تعینات ہوجاتا ہے تو اس میں نیب کا کوئی قصور نہیں متعلقہ محکمے کو ملزم کے خلاف ڈیپارٹمنٹل کاروائی کرنی چاہیے نیب ملتان بیورو نے کرپشن کے خلاف گزشتہ ڈیڑھ سال بھرپور جہاد کیا ہے ایسے ملزمان پر ہاتھ ڈالا ہے جن کے خلاف کارروائی کا سوچا بھی نہیں جاسکتا تھا میگا سیکنڈلز کو منطقی انجام تک پہنچایا گیا ہے باقی سیکنڈلز پر کارروائی اختتامی مراحل میں ہے آنے والے دنوں میں بااثر سمجھے جانے والے ملزمان قانون کے دائرے میں ہوں گے انہوں نے کہا کہ’’ میٹرو بس پراجیکٹ ملتان کے حوالے سے بعض شکایات موصول ہوئی ہیں ان پر قانون کے مطابق عمل کیا جائے گا‘‘ ایم ڈی اے کے افسران اور اہلکاروں کے خلاف بھی شکایات پر کارروائی جاری ہے نیب ملتان بیورو کا دائرہ کار تین ڈویثرنز ملتان ،بہاولپور،ڈیرہ غازی خان تک ہے جبکہ ساہیوال ڈویثرن کو نیب ملتان بیورو کے دائرہ کار میں لانے کیلئے کارروائی جاری ہے ان ڈویثرنز میں وفاقی ،صوبائی خودمختارو نیم خود مختیار این جی اوز اور عوام کو بڑے پیمانے پر لوٹنے والے ملزمان کے خلاف نیب کارروائی کرسکتا ہے انہو ں نے کہا کہ گزشتہ ڈیڑھ سال کے دوران 52ریفرنسز عدالتوں میں دائر کیے گئے ہیں صرف گزشتہ 5ماہ کے دوران عدالتوں میں داخل کیے جانے والے ریفرنسز کی تعداد 12ہے بی زیڈ یو کے شعبہ فاصلاتی نظام تعلیم میں کروڑوں روپے کی بے قاعدگیوں میں ملوث ملزمان کی گرفتاری آئندہ چند روز میں متوقع ہے ۔

میگا سکینڈلز

مزید : کراچی صفحہ اول